پاکستان کے فیملی قوانین میں ترامیم کرنا ہوں گی لیکن اسلامی قوانین میں ہرگز ترمیم نہیں ہوسکتی: فاروق ایچ نائیک

پاکستان کے فیملی قوانین میں ترامیم کرنا ہوں گی لیکن اسلامی قوانین میں ہرگز ...
پاکستان کے فیملی قوانین میں ترامیم کرنا ہوں گی لیکن اسلامی قوانین میں ہرگز ترمیم نہیں ہوسکتی: فاروق ایچ نائیک

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)سینیٹر فاروق ایچ نائیک نے کہا ہے کہ پاکستان کے فیملی قوانین میں ترامیم کرنا ہوں گی لیکن اسلامی قوانین میں ہرگز ترمیم نہیں ہوسکتی۔

فاروق ایچ نائیک کی زیرصدارت سینیٹ کمیٹی قانونی اصلاحات کا اجلاس ہوا جس سے خطاب کرتے ہوئے سینیٹر فاروق ایچ نائیک کا کہنا تھا کہ ہمیں پاکستان کے فیملی قوانین میں ترامیم کرنا ہوں گی،طلاق،کسٹڈی، خرچہ اورگارڈین شپ کے قوانین میں ترامیم کرناہوں گی،فیملی قوانین خواتین کوبہت متاثر کرتے ہیں،ان قوانین میں ترامیم اسلامی قانون کے تحت ہی ہوں گی۔ان کا مزید کہنا تھا کہ موت کی سزا دنیا بھر میں اہم مسئلہ ہے،سزائے موت کے انسان کے بنائے قوانین میں تبدیلی کرسکتے ہیں لیکن اسلامی قوانین میں ہرگز ترمیم نہیں ہوسکتی۔

مزید : قومی /سیاست /علاقائی /اسلام آباد