حوثی باغیوں کی وجہ سے یمن کے سیاسی امن عمل میں مشکلات درپیش ہیں:عالمی مندوب

Sep 12, 2018 | 19:56:PM

صنعاء (این این آئی)یمن کے لیے اقوام متحدہ کے خصوصی ایلچی مارٹن گریویتھ نے کہا ہے کہ یمن کی آئینی حکومت اور اس کے عرب اتحادی یمن میں امن مساعی اور سیاسی عمل کو آگے بڑھانے میں تعاون کررہے ہیں مگر حوثی باغیوں کی طرف سے امن عمل میں تعاون نہیں کیا جا رہا ہے۔حوثیوں کی عدم دلچسپی اور غیر حاضری کے علی الرغم یمن میں امن مشن جاری رکھا جائے گا۔

غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق گریویتھ نے سلامتی کونسل کے اجلاس میں یمن میں جاری بحران کے خاتمے کے لیے جاری سفارتی مساعی کے حوالے سے ایک رپورٹ بھی پیش کی۔ انہوں نے کہا کہ یمنی حکومت اور عرب اتحاد نے یمن میں جو تعمیری منہج اختیار کیا اس نے میرا سینہ ٹھنڈہ کردیا۔ یمن کے آئینی صدر عبد ربہ منصور ھادی اور ان کی حکومت تنازع کے پرامن حل کے لیے ہرممکن تعاون کررہے ہیں۔اقوام متحدہ کے ایلچی کا کہنا تھا کہ حوثیوں کی لاپرواہی اور گیر حاضری کے باوجود ہم نے یمن میں قیام امن کی کوششوں کو آگے بڑھایا۔ امید ہے کہ امن مساعی کی راہ میں کھڑی کی جانیوالی رکاوٹیں ناکام ہوں گی۔ ان کا کہنا تھا کہ کوشش کے باوجود ہم ایرانی حمایت یافتہ حوثی باغیوں کو’جنیوا‘ میں امن عمل میں شریک نہیں کرسکے ہیں، مگر حوثیوں کے ساتھ صنعاء اور مسقط میں امن بات چیت کی کوششیں جاری رہیں گی۔

مزیدخبریں