امریکہ ہوا وے کے ساتھ اچھا سلوک نہیں کر رہا، صدر مائیکرو سافٹ

امریکہ ہوا وے کے ساتھ اچھا سلوک نہیں کر رہا، صدر مائیکرو سافٹ

لاہور(پ ر) مائیکرو سافٹ کے صدر اور چیف لیگل آفیسر،بریڈ اسمتھ نے کہا ہے کہ امریکی حکومت ہوا وے کے ساتھ جو سلوک کر رہی ہے وہ غیر امریکی ہے۔نیٹ ورکنگ ایکوئپمنٹ اور موبائل فون بنانے والی چین کی اس اہم کمپنی کو اپنی ہی کمپنی سے سافٹ وئر سمیت امریکی ٹیکنالوجی خریدنے کی اجازت ہونی چاہیئے"۔انھوں نے کہا کہ  " حقائق پر مبنی ٹھوس بنیادوں، منطق اور قانون کی حکمرانی" کے بغیر اس قسم کے اقدامات نہیں کیے جانے چاہیئں۔ مائیکروسافٹ نے امریکی ریگولیٹرز سے کہا ہے کہ وہ وضاحت دیں۔انھوں نے کہا کہ اگر آپ جانتے ہیں کہ ہمیں یہ معلوم ہے کہ آپ ہم سے اتفاق کریں گے تو عام طور پر اچھا جواب آتا ہے۔انھوں نے امریکا کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ اگر آپ کے پاس کہنے کے لیے کچھ ہے تو ہمیں بتایئے تاکہ ہم خود کوئی فیصلہ کر سکیں،حکوتیں اسی طرح سے کام کرتی ہیں۔انھوں نے کہا کہ " امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کا کہنا ہے کہ چینی فوج کے ایک سابق ٹیکنالوجسٹ  کی طرف سے چلائی جانے والی ہواوے کمپنی قومی خطرہ ہے،ان کے ڈیپارٹمنٹ آف کامرس نے اس پر ایسی برآمدی پابندیاں عائد کر دی ہیں جو نومبر میں پورے طور پر نافذ ہوں گی"۔انھوں نے ہوٹل انڈسٹری میں ٹرمپ کے تجربے کی مثال دیتے ہوئے کہا کہ انھیں تو بہتر طور پر معلوم ہونا چاہیئے۔" اگر آپ کسی ٹیک کمپنی کو یہ کہیں کہ وہ پراڈکٹس فروخت کر سکتی ہے مگر آپریٹنگ سسٹم یا chips نہیں خریدسکتی تو یہ کسی ہوٹل کمپنی کو یہ کہنے کے مترادف ہے کہ آپ اپنے دروازے تو کھول سکتے ہو مگر کمروں میں بیڈ اور اپنے ریسٹورانٹ میں کھانا نہیں رکھ سکتے"۔

مزید : کامرس


loading...