قائد اعظم محمد علی جناح‘ بیگم کلثوم نواز کی برسی پرمختلف شہروں میں دعائیہ تقریب

قائد اعظم محمد علی جناح‘ بیگم کلثوم نواز کی برسی پرمختلف شہروں میں دعائیہ ...

  

ملتان (سٹی رپورٹر)مسلم لیگ ن ورکز الائنس کے زیر اہتمام قائداعظم کی 71ویں اور بیگم کلثوم نواز کی پہلی برسی کے موقع پر منعقدہ دعائیہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے تنظیم ہذا کے صدر شیخ مقیم احمد نے کہا ہے کہ بیگم کلثوم نواز کی جمہوریت(بقیہ نمبر5صفحہ12پر )

 کیلئے دمات کو ہمیشہ یاد رکھا جائے گا۔ان کی سیاسی جدوجہید نے لیگی خواتین اور کارکنوں میں نیا جوش اور ولولہ پیدا کیا۔انہوں نے کہا کہ پاکستان کسی طالع آزما نے بندوق کی نوک پر ہمیں تحفے میں نہیں دیا۔یہ قائداعظم ایسے سیاستدانوں کی سیاسی بصیرت کا ثمر ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ آج ہماری باہیمی چپقلس کی وجہ سے بھارت کو کشمیر ضم کرنے کا موقع ملا ہے۔بھارت جو کام 72 سالوں میں نہ کرسکا آج سیاستدانوں کے باہم دست گریباں ہونے کی وجہ سے اس میں جرات پیدا ہوگی ہے۔ کارکنوں کی جمہوریت کیلئے جدوجہید رنگ لائے گی کٹھ پتلی حکومت کا خاتمہ نوشتہ دیوار ہے۔اکتوبر کا اسلام آباد لاک ڈاون حکومت کے تابوت میں آخری کیل ثابت ہوگا۔اس موقع پردعائیہ تقریب میں محمد اقدس۔تکبیر احمد۔محمد واجد۔آصف پہلوان۔عرفان قریشی۔محمد راشد۔محمد فرحان۔ارسلان احمد۔محمد عابد۔محمد ساجد۔برھان۔مدثر۔قمردین ودیگر کارکنان شریک ہیں۔سابق رکن قومی اسمبلی شیخ طارق رشید، سابق صوبائی وزیر حاجی احسان الدین قریشی ،سینئررہنما حاجی ارشد بوٹا نے کہا ہے کہ موجودہ حکومت عوام کے مسائل حل کرنے میں بری طرح ناکام ہو چکی ہے مشرف دور حکومت میں بیگم کلثوم نواز نے جو تاریخی قربانیاں دیں ان کو ہمیشہ یاد رکھا جائے گا ان خیالات کا اظہار انہوں نے سینئرلیگی رہنما حاجی ارشد بوٹا کی رہائش گاہ پر بیگم کلثوم نواز مرحوم کے درجات کی بلندی کے لئے پہلی سالانہ دعائیہ تقریب سے خطاب میں کیا جس میں مولانا سعید احمد فاروقی نے مرحومہ کے درجات کی بلندی کے لئے دعا کرائی تقریب میں سابق چیئرمین زاہد بشیر، قسور بھٹی، رانا نعیم، ہاشم رشید، مطیع الحسن بخاری، آصف کمبوہ بھی موجود تھے شیخ طارق رشید نے مزید کہا کہ پارٹی قائدین کے خلاف انتقامی کاروائیاں بند نہ کی گئیں تو لیگی کارکنان احتجاجی تحریک چلانے پر مجبور ہو جائیں گے ۔مسلم لیگ (ن) کے سٹی صدر سلطانہ شاہین، ضلعی صدر ڈاکٹر حمیدہ خانم، ضلعی جنرل سیکریٹری روبینہ خلیل نے کہا ہے کہ بیگم کلثوم نواز کی آمریت کے دور میں جمہوریت کے استحکام کے لئے لازوال قربانیوں کو ہمیشہ یاد رکھا جائے گا عمران خان کا دور حکومت بھی آمریت سے کم نہیں اگر ضرورت پڑی تو پارٹی قیادت کی کال پر خواتین سڑکوں پر نکلنے پر مجبور ہو جائیں گے ان خیالات کا اظہار انہوں نے اپنی رہائش گا ہ پر بیگم کلثوم نواز کی پہلی سالانہ برسی کے سلسلے میں منعقدہ دعائیہ تقریب سے خطاب میں کیا جس میں دیگر خواتین رہنماﺅں آپا نسرین ،ثروت خان، فہمیدہ چوہان، روبنیہ شاہین، تہمینہ نور، عطیہ ربنواز، نسیم زہرہ ودیگر موجود تھے سلطانہ شاہین نے مزید کہا کہ بانی پاکستان قائد اعظم ؒ محمد علی جناح کے بھی فرمودات کو حکمران بھول گئے ہیں جنہوں نے شہریوں سے روٹی کا نوالہ تک چھین لیا ہے اور صحت و تعلیم جیسی بنیادی سہولیات تک چھیننے کے درپے ہیں پارٹی قائدین کے خلاف انتقامی کاروائیاں بند کی جائیں مسلم لیگ (ن) کی قیادت نے سڑکوں پر آنے کی کال دی تو خواتین کارکنان سروں پر کفن باندھ کر باہر نکلیں گی جبکہ تقریب کے دوران خواتین کارکنان نے بیگم کلثوم نواز کی تصاویر والے پوسٹرز بھی آویزاں کر رکھے تھے۔

وہاڑی ‘ بورے والا‘ خان پور(بیو رو رپورٹ ‘ نامہ نگار ‘ تحصیل رپورٹر )مسلم لیگ ن کے رہنما سابق ممبر قومی اسمبلی چوہدری نذیر احمد آرائیں اور ممبران صوبائی اسمبلی سردار خالد محمود ڈوگر اور چوہدری محمد یوسف کسیلیہ نے کہا ہے کہ بانی پاکستان قائداعظم (بقیہ نمبر4صفحہ12پر )

محمد علی جناح نے جس طرح برصغیر کے مسلمانوں کے لئے دو قومی نظریہ کے تحت قیام پاکستان کےلئے جدوجہد کی اس کی مثال دنیا کی تاریخ میں نہیں ملتی ،ان خیالات کا اظہار انہوں نے گذشتہ روز مسلم لیگ ن کے ممبر قومی اسمبلی چوہدری فقیر احمد آرائیں کے پبلک سیکریٹریٹ ایم بلاک میں بانی پاکستان قائداعظم محمد علی جناح کی 71 ویں اور سابق خاتون اول بیگم کلثوم نواز کی پہلی برسی کے موقع پر دعائیہ تقریب سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ،اس موقع پر ضلعی صدر یو تھ ونگ منظور برکت ماڑی والا،پیر حمید چشتی، چوہدری فرخ اسلام، سابق ناظم چوہدری عبدالرشید بگیانوالا، فیاض قاسم،محمد شاہد،ملک رحمت علی سابق کونسلر، اور دیگر بھی موجود تھے، انہوں نے کہا کہ تحریک پاکستان کے رہنماو¿ں نے قائداعظم محمد علی جناح کی ولولہ انگیز قیادت میں پاکستان کے وجود میں لانے کیلئے ایک اہم کردار ادا کیا،انہوں نے سابق خاتون اول بیگم کلثوم نواز کی جمہوریت کی بحالی اور آمریت کے خلاف جدوجہد کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا کہ ان کی کاوشوں کو تاریخ میں سنہری حروف میں لکھا جا ئیگا،انہوں نے ایک خاتون ہونے کے ناطے جس طرح جرآت اور بہادری سے آمرانہ ہتھکنڈوں کا مقابلہ کیا وہ قابل تحسین ہے ، اس موقع پر بانی پاکستان قائداعظم محمد علی جناح اور بیگم کلثوم نواز کی ارواح کو ایصال ثواب اور درجات کی بلندی کےلئے فاتحہ خوانی کی گئی۔قائد اعظم محمد علی جناح کی ناقابل تحسین خدمات کو خراج تحسین عقیدت پیش کرنے کیلئے دفتر سُنی تحریک خان پور میں تعزیتی اجلاس منعقد ہوا ،اجلاس کی صدارت جنرل سیکرٹری سُنی تحریک پنجاب جواد حسن گل قادری نے کی ،اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے جواد حسن گل قادری نے کہا کہ قائد اعظم محمد علی جناح کی لا زوال قربانیوں اور اُن کی دلیرانہ قیادت کی بدولت پاکستان معرض وجود میں آیا رہتی دنیا تک اُن کی اس خدمات کو ہمیشہ کیلئے یاد رکھا جائے گا اُن کی خدمات کے بعد جو خلاءپیدا ہوا وہ آج تک پورا نہیں ہو سکا ،اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ پاکستان بننے کے بعد اس کو ترقی یافتہ بنانے کے لیے جو اصول قائد اعظم محمد علی جناح نے پیش کیے افسوس ہے کہ آج تک ان اصولوں پر عمل در آمد نہ ہو سکا،اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے جواد حسن گل قادری نے کہا کہ ہم یوم عاشورہ پر ڈی اسسٹنٹ کمشنر خان پور محمد اکبر ظہور ،ایس ڈی پی او چوہدری فرخ جاوید ،ایس ایچ او سٹی اسد اللہ خا ،ستوئی ،ایس ایچ او سیف اللہ خان کورائی و دیگر سکیورٹی اہلکاروں کو بہترین انتظام کرنے پر خراج تحسین پیش کرتے ہیں ۔اجلاس میں صدر سُنی تحریک تحصیل خان پور سید علی رضا شاہ قادری ،صدر سُنی تحریک ریاض کالونی احتشام علی قادری ،مدثر جیلانی صراف ،رانا سجاد علی چشتی ،ولید بٹ چشتی ،صائم گجر ،وقاص قادری ،ناصر بلوچ ،نعیم قریشی ،طارق قریشی ،محمد انیس ،کارکن سُنی تحریک ،محمد شہزاد ،اسد علی سمیت دیگر اجلاس میں شریک تھے ۔ پاکستان تحریک انصاف کے رہنما ارکان قومی اسمبلی اورنگزیب خان کھچی ،طاہر اقبال چوہدری، صوبائی وزیر جہانزیب خان کھچی نے کہا ہے کہ آزادی کی نعمت کو وہی قومیں سمجھ سکتی ہیں جو سالہا سال سے غلامی کی زنجیروں میں جکڑے جانوروں سے بھی بدتر زندگی گزار رہے ہیںپوری قوم کے شکر گزارہے اپنے قائد محمد علی جناح کی جن کی کوششوں ،محنت اور دانش مندی نے ہمیں آزادی جیسی نعمت سے نوازا ہے اگر قائد اعظم محمد علی جناح ہندو سیاستدانوں کی چکنی چپڑ باتوں میں آکر متحد ہوکر رہنے پر آمادہ ہوجاتے توآج ہمارا بھی وہی حشر ہوتا جو مقبوضہ کشمیر کے مسلمانوں کا ہے پی ٹی آئی رہنما وں نے قائد اعظم کی برسی کے موقع پر اپنے خیالات کا اظہار کر رہے تھے،پاکستان مسلم لیگ ن کے رہنما رکن صوبائی اسمبلی میاں ثاقب خورشید نے کہا کہ یہ ہماری بدقسمتی تھی کہ آزادی حاصل کرنے کے بعدقائد اعظم محمد علی جناح زیادہ عرصہ تک زندہ نہ رہ سکے،اور ان کے بعد ہمیں ان جیسی قیادت بھی نصیب نہ ہوئی،یہاں جمہوریت کو آگے نہ بڑھنے دیا گیا اور بار بار کی آمرانہ مداخلت نے بہت نقصان پہنچایا،پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما راﺅ ساجد محموداور پی پی جنوبی پنجاب کی جنرل سیکرٹری نتاشہ دولتانہ نے کہا کہ قائد اعظم محمد علی جناح کے بعد ایک لیڈر ذوالفقار علی بھٹو کی شکل میں قوم کو نصیب ہوا تھا لیکن ایک سازش کے ذریعے اسے بھی راستہ سے ہٹا دیا گیااور پھر ان کے بعد لوٹ کھسوٹ کا ایسا گھناﺅنا کھیل کھیلا گیا کہ آج ہم تباہی و بربادی کے آخری کنارے تک پہنچ چکے ہیںجماعت اسلامی کے رہنما حاجی طفیل وڑائچ اور ڈاکٹر محمد اقبال نے کہا کہ جو قوم اپنے محسنوں کے بتائے ہوئے راستے اور ان کے اصولوںسے منہ موڑ لیتے ہیں ناکامی ان کا مقدر بن جاتی ہے آج اگر ہم اپنے محسن قائد اعظم محمد علی جناح کی زندگی کو زاد راہ بنالیں تو کامیاب ہوسکتے ہیں۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -