سانحہ ساہیوال، مقتول کے ورثا کانامزد ملزمان کی پیشی پرشناخت سے انکار

  سانحہ ساہیوال، مقتول کے ورثا کانامزد ملزمان کی پیشی پرشناخت سے انکار

لاہور(نامہ نگار)انسداد دہشت گردی کی عدالت میں سانحہ ساہیوال میں سی ٹی ڈی کے 6 اہلکاروں کی فائرنگ سے خلیل احمد سمیت اس کی فیملی کے دیگر افراد کی ہلاکت کیس کی سماعت کے دوران مقول کے بھائی جمیل اور 2بچوں نے ملزمان کو شناخت نہیں کیا، فاضل جج نے مزید گواہوں کو طلب کرتے ہوئے کیس کی سماعت 13ستمبر تک ملتوی کردی۔انسداد دہشت گردی کی عدالت میں سائیوال یوسف والا میں کاؤنٹر ٹیررازم ڈیپارٹمنٹ(سی ٹی ڈی کے 6 اہلکاروں کی مبینہ فائرنگ سے ہلاک ہونے والے خلیل احمد کی فیملی کی ہلاکت کے کیس کی سماعت ہوئی،گزشتہ روز عدالت میں مقتول کے بھائی جمیل اور دو زخمی بچے عمیراور اْنیبہ نے ملزمان کو شناخت کرنے سے انکار کردیا۔ ان کا کہنا تھا کہ ہمیں معلوم نہیں انہیں کس نے قتل کیا ہے جبکہ دوسری جانب اسی وقوع میں ہلاک ہونے والے ڈرائیوذیشان کے بھائی احتشام کا کہنا تھا کہ اس کو اتنا معلوم ہے کہ اس کا بھائی شادی کے لئے گیا،پھر اطلاع ملی کہ وہ راستے قتل ہوگیاہے،عدالت میں دیگر گواہوں نے بھی اپنے بیان قلمبد کرائے،عدالت نے کیس کے مزید گواہوں کو طلب کرتے ہوئے کیس کی سماعت 13ستمبر تک ملتوی کردی۔

سانحہ ساہیوال

مزید : صفحہ آخر


loading...