مریضوں کو سہولیات کی فراہمی کیلئے عملی اقدامات کا آغاز کر دیا، ظفر مرزا

     مریضوں کو سہولیات کی فراہمی کیلئے عملی اقدامات کا آغاز کر دیا، ظفر مرزا

  

  اسلام آباد(آئی این پی)وزیر اعظم کے معاون خصوصی برائے صحت ڈاکٹر ظفر مرزاکی زیر صدارت پولی کلینک کی اصلاحاتی کمیٹی کا اجلاس ہوا۔ اجلاس میں سیکرٹری وزارت صحت ڈاکٹر اللہ بخش ملک، ایگزیکٹو ڈائریکٹر پولی کلینک ڈاکٹرشعیب اور دیگر ممبران نے شرکت کی۔ اجلاس میں ڈاکٹر ظفر مرزا نے اب تک کئے جانے والے فیصلوں پر عمل درآمد کے حوالے سے پراگریس رپورٹ کا جائزہ لیا۔ اصلاحاتی کمیٹی کے اجلاس میں 220 ایڈیشنل پوسٹ گریجویٹ ٹرینی ڈاکٹرز کی نئی اسامیوں کی تخلیق کی سفارشات منظوری دی گئی۔ اس موقع پر ڈاکٹر ظفر مرزا نے کہا صحت کے شعبے میں بہتری لانے کے لیے اصلاحات عمل تیزی سے جاری ہے،ہسپتالوں کی کارکردگی کو مثالی بنانے اور ہسپتال کے اندر مریضوں کو ہر ممکن سہولیات کی فراہمی کویقینی بنانے کے لیے عملی اقدامات کا آغاز کر دیا ہے۔ وزیر اعظم کے تصو ر اور ہدایت کے مطابق سرکاری ہسپتالوں کی کا رکردگی کو مثالی بنانے کے لیے پر عزم ہیں تاکہ یونیورسل ہیلتھ کوریج کو یقینی بنایا جا سکے۔ڈاکٹر ظفر مرز ا نے کہا موجودہ صورتحال میں پولی کلینک ہسپتال میں مریضوں کا بوجھ بہت زیادہ ہے تقریباً آٹھ ہزار مریض روزانہ ہسپتال میں علاج کے لیے آتے ہیں اس بوجھ کو کم کرنے کے لیے پولی کلینک سے ملحقہ 35 ڈسپنریوں میں اصلاحات کی جا رہی ہیں  ان اصلاحات کے نتیجے میں کچھ غیرفعال ڈسپنسریز کو بند کر کے اس کے عملے کو ہسپتال میں منتقل کیا جا رہا ہے اس عملے کی ہسپتال میں منتقلی سے ہسپتال میں آنے والے لاتعداد مریضوں کو صحت کی سہولیات کی فراہمی کو یقینی بنایا جا سکے گا۔ کچھ ڈسپنسریز کو نیا رول دیا جا رہا ہے جس سے ہسپتال کے رش کو کم کرنے میں مدد ملے گی۔ ڈاکٹر ظفر مرزا نے مزید کہا آنے والے چند مہینوں میں ان اصلاحات سے صحت کے شعبے میں واضح تبدیلی نظر آئے گی۔ اس موقع پر ایگزیکٹو ڈائریکٹر پولی کلینک ڈاکٹر شعیب نے بتایا پولی کلینک ہسپتال میں پہلی مرتبہ ایم آر آئی مشین، سی ٹی سکین اور میموگرافی مشین نصب کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ پولی کلینک کے گائنی ڈیپارٹمنٹ کو اپ گریڈ کیا جا رہا ہے اور 123 ملین کی لاگت سے نئے آلات خریدے جا رہے ہیں جس کا ٹینڈر اخبار میں دیے دیا ہے۔ 

 ڈاکٹر ظفر مرزا

مزید :

صفحہ آخر -