سانحہ موٹروے پر خیبر پختونخوا اسمبلی میں ہنگامی، خواتین ارکان کا احتجاج، واک آؤٹ

  سانحہ موٹروے پر خیبر پختونخوا اسمبلی میں ہنگامی، خواتین ارکان کا احتجاج، ...

  

 پشاور(این این آئی)لاہورموٹروے پررونماہونیوالاواقعہ خیبرپختونخوااسمبلی پہنچ گیا۔ معاملے پر بولنے کی اجازت نہ ملنے پراپوزیشن کی خواتین ایوان سے واک آؤٹ کرگئیں۔ ڈپٹی سپیکرمحمودجان اورپی پی رکن نگہت اورکزئی کے مابین تلخ جملوں کاتبادلہ بھی ہوا۔جے یوآئی کی رکن نعیم کشورنے نکتہ اعتراض پر کہاکہ لاہورموٹروے پر جوافسوسناک واقہ پیش آیاپاکستان سمیت پوری دنیا اسکی مذمت کرتی ہے، پشاورمیں خواجہ سراء اورنوشہرہ میں لیڈی کانسٹیبل کوقتل کیاگیاایسے واقعات ملک کی بدنامی کاباعث بن رہے ہیں۔ مجھ سے کوئی نہیں پوچھتاکہ آپ اکیلی کیوں سفرکررہی ہیں لیکن متعلقہ سی سی پی او نے بیان دیاہے کہ خاتون کواکیلے سفرنہیں کرناچاہئے۔ پوچھناچاہتی ہوں ساہیوال واقعے میں خاتون کیساتھ محرم بھی تھا پٹرول بھی تھاپھرکیوں واقعہ پیش آیا۔ سی سی پی اوکیخلاف بھی ایکشن لیناچاہئے یہ اندوہناک واقعہ ہے، پوری قوم اسکی مذمت کرتی ہے۔سکیورٹی افسران کے اس قسم کے بیانات حکومت کی بدنامی کاسبب بنتے ہیں۔اس دوران جب پی پی کی رکن نگہت اورکزئی نے بات کرناچاہی تو ڈپٹی سپیکر محمودجان نے انہیں بولنے کا موقع نہیں دیا جس پر خاتون رکن نے شدیداحتجاج کرتے ہوئے ایوان سے واک آؤٹ کیا۔ڈپٹی سپیکرمحمودجا ن نے کہاکہ حکومت نے واقعے پرفوری ایکشن لیاہے اورپولیس حکام سے وضاحت طلب کی ہے۔ جب نگہت اورکزئی دوبارہ ایوان آئیں تو انہوں نے ایوان میں ہنگامہ کھڑا کردیا اورچیخناچلاناشروع کردیا۔ ڈپٹی سپیکرنے واضح کیاکہ کوئی جتنابھی چلائے کسی کو ہاؤس یرغمال نہیں کرنے دونگا، جس پردیگراپوزیشن خواتین نے نگہت کاساتھ دیتے ہوئے ایوان سے واک آؤٹ کیا۔

کے پی کے اسمبلی

مزید :

صفحہ اول -