ایس ایچ او تھانہ شورکوٹ کوخاوند اور بچے بازیاب، عدالت پیش کرنے کاحکم

ایس ایچ او تھانہ شورکوٹ کوخاوند اور بچے بازیاب، عدالت پیش کرنے کاحکم

  

لاہور(نامہ نگار)لاہورہائی کورٹ نے جھنگ میں سگے بھائیوں کی جانب سے 2سالہ بچے اور اس کے خاوند کو اغواء کرنے کے ساتھے ساتھ آنکھوں پر تیزاب پھینکنے کے خلاف خاتون (بہن)کی درخواست پرایس ایچ او تھانہ شورکوٹ کوخاوند مظہرعباس اور بچے کو بازیاب کرواکر عدالت میں پیش کرنے کاحکم دے دیاہے درخواست گزار متاثرہ خاتون شہناز مائی کی طرف سے موقف اختیار کیا گیاہے کہ وہ شادی شدہ ہے،اس کے بھائیوں نے اس کے شوہر اور کمسن بچے کو زبردستی اپنے پاس رکھا ہواہے درخواست گزار نے مزید کہا کہ پہلے خاوند کی وفات کے بعد اس نے اپنی مرضی سے مظہر عباس سے شادی کی 10 روز قبل بھائیوں نے مجھے خاوند اور بیٹے سمیت اغوا کر لیا بھائیوں نے تشدد کے بعد اس کی آنکھوں میں تیزاب ڈال دیا جس سے ایک آنکھ ضائع ہو چکی ہے،تیزاب سے سب سے چھوٹا بچہ فرمان حیدر بھی جھلسنے کے باعث زخمی ہے،وہ زنجیریں تڑوا کر بھائیوں کے چنگل سے نکل کر لاہور پہنچی ہے عدالت سے استدعاہے کہ اس کے خاوند اور بیٹے کوبھائیوں سے بازیاب کروانے کا حکم دیاجائے۔

بازیابی کا حکم

مزید :

صفحہ آخر -