مضر صحت اشیا کی فروخت بڑھ  گئی‘ 25فوڈیونٹس سربمہر  

   مضر صحت اشیا کی فروخت بڑھ  گئی‘ 25فوڈیونٹس سربمہر  

  

ملتان (سٹاف رپورٹر) جنوبی پنجاب میں مضر صحت اشیا کی فروخت بڑھ گئی‘پنجاب فوڈ اتھارٹی نے 25یونٹس سربمہر کر دئیے(بقیہ نمبر49صفحہ6پر)

‘تفصیلات کے مطابق فوڈ سیفٹی ٹیمز نے کارروائیاں کرتے ہوئے ملتان میں لالا بھٹی سوئیٹس،کاشف مغل بیکری، لودھراں میں منور سوہن حلوہ،وہاڑی میں ممتاز سوئیٹس کو مٹھائی میں رنگ کاٹ و ممنوعہ اجزاء کی آمیزش کرنے پر سیل کیا۔خانیوال میں طارق لیمن سوڈا،فیصل سعید سوڈاواٹرکو مشروبات میں برکس ویلیو کم ہونے، مصنوعی مٹھاس کا استعما ل کرنے پر سیل کیاگیا۔لودھراں میں القمر پنسارسٹور، حاجی محمد شفیع کریانہ کو ناقابل سراغ، کھلے مصالحہ جات کے استعمال پر سربمہر کیاگیا۔رحیم یارخان میں جمالی کریم سپریشن یونٹ پاؤڈر سے دودھ تیار کرنے، بہاولنگر میں محمد بخش کھویا یونٹ ملاوٹی دودھ کی فروخت کرنے پر سربمہر کیاگیا۔بہاولپور میں رانا فوڈ کیفے، میاں فوڈ کارنر، ملک فوڈ کارنر، مہروی ہوٹل، مظفرگڑھ میں محسن ڈرنک کارنر،بہاولنگر میں ساجد ندیم سوئیٹس، ڈی جی خان میں سعد ڈرنک کارنر،اشفاق کریانہ،لیہ میں مہر اویس سٹور، ابوبکر کریانہ، الکریم سوئیٹس، راجن پور میں فریش ویل سوئیٹس، پنجاب سوئیٹس اینڈ بیکرز کو دی گئی ہدایات پر عدم درآمد اور لائسنس فیس کی عدم ادائیگی پر فوڈ یونٹس کو سیل کیاگیا۔ اس کے علاوہ فوڈسیفٹی ٹیموں نے وہاڑی میں دودھ بردارگاڑی پکڑی۔دودھ میں کھاد،پانی اورفارمالین کی ملاوٹ پائی گئی۔ٹیسٹ فیل ہونے پر گاڑی میں موجود 500لیٹر دودھ تلف کردیاگیا۔مزیدبراں ملتان میں 121،ساہیوال56،بہاولپور میں 95اور ڈی جی خان میں 115فوڈ پوائنٹس کی چیکنگ کی گئی۔ملتان میں 12، ساہیوال میں 06، بہاولپورمیں 06اور ڈی جی خان میں 06فوڈ یونٹس کو 225,000روپے کے جرمانے عائد کیے گئے۔

سربمہر

مزید :

ملتان صفحہ آخر -