ملتان:نجی سکول و کالج مافیا طلبہ سے رقوم بٹورنے کیلئے سرگرم

   ملتان:نجی سکول و کالج مافیا طلبہ سے رقوم بٹورنے کیلئے سرگرم

  

ملتان (سٹاف رپورٹر)کرونا وائرس وبا کی وجہ سے لگنے والے لاک ڈاؤن کے بعد 15 ستمبر سے دوبارہ تعلیمی سرگرمیوں کا آغاز ہورہا ہے اس سلسلے ملتان اور اردگرد کے علاقوں میں  وہ مافیا جو تعلیم کو کاروبار بنائے بیٹھاہے‘ سرگرم ہوگیا ہے ذرائع کے مطابق گلگشت کالونی‘ممتاز آباد‘ کینٹ‘ شاہ رکن عالم کالونی‘ بستی ملوک سمیت مختلف علاقوں کے بڑے بڑے تعلیمی اداروں (بقیہ نمبر24صفحہ6پر)

کی انتظامیہ کی جانب سے طلبا و طالبات کے گھروں میں فون کئے جارہے ہیں کہ 12 ہزار طالبعلم کا کرونا ٹیسٹ فیس،پچھلے  6 ماہ کا بس کرایہ جمع کرائیں جب کہ 6 ماہ نہ سکول کھلے نہ بس سروس استعمال ہوئی‘ 6 ماہ کی کالج کی فیس اور 5 ہزار ایڈمیشن فیس کل ملا کر  30/35 ہزار روپے بنتے ہیں وہ کالج/سکول جمع کروائیں ورنہ بچوں کا نام خارج کردیا جائے گا‘ان حالات میں والدین کا موقف ہے کہ کرونا کی وجہ سے ان کے حالات زندگی متاثر ہیں اور اب پرائیویٹ سکول مافیا جو تعلیم کو کاروبار بنائے بیٹھا ہے نے ناجائز پیسوں کا مطالبہ کردیا ہے جو کہ حکومت اور سپریم کورٹ کے احکامات کی خلاف ورزی ہے‘ انہوں نے ڈی سی ملتان اور ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ سمیت تمام متعلقہ اداروں سے ایکشن لینے کا مطالبہ کیا ہے۔

سرگرم

مزید :

ملتان صفحہ آخر -