موٹر وے پر خاتون سے بد اخلاقی، عمران خان، گورنر پنجاب کو مستعفی ہو نا چاہیے: جاوید ہاشمی 

موٹر وے پر خاتون سے بد اخلاقی، عمران خان، گورنر پنجاب کو مستعفی ہو نا چاہیے: ...

  

 ملتان(نمائندہ خصوصی)سینئر سیاستدان و مسلم لیگ ن کے رہنما مخدوم جاوید ہاشمی نے کہا ہے کہ پاکستان اور جمہوریت لازم و ملزوم ہیں۔ جو جمہوریت کا راستہ روکنے کی کوشش کرے گا وہ مٹ جائے گا۔ ریاست مدینہ کا تصور دینے والے حکمرانوں کے دور میں ایک خاتون کے ساتھ موٹروے پر جس درندگی کا مظاہرہ کیا گیا ہے اس پر عمران خان اورگورنرپنجاب کو مستعفی ہو جانا چاہیئے۔ قوم ایسے درندروں کو کبھی(بقیہ نمبر23صفحہ6پر)

 معاف نہیں کرے گی۔ محترمہ کلثوم نواز کے شانہ بشانہ ہم نے بھی جمہوریت کے لئے جدوجہد کی۔ جس کے نتیجے میں پرویز مشرف کو اقتدار چھوڑنا پڑا۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے بیگم کلثوم نواز کی برسی کے سلسلے میں مسلم لیگ ن کے رہنما عقیل انصاری کی رہائش گاہ پر میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کیا۔ مخدوم جاوید ہاشمی نے کہا کہ بیگم کلثوم نواز ایک شخصیت نہیں تحریک کا نام تھا، انہیوں نے مسلم لیگ کو مشکل وقت میں سہارا دیا، جب انکے تمام اہل خانہ اور لیڈرشپ گرفتار ہو چکی تھی۔ جب وہ اکیلی جدوجہد کے لئے نکلیں تو ہم نے ان کا بھرپور ساتھ دیا۔ انہوں نے ملتان بار میں وکلاء  سے بھی خطاب کیا تھا۔اس وقت نوابزادہ نصراللہ جیسے قدا?ور سیاستدان نے کہا کہ مجھے کلثوم نواز کے طرز خطابت میں ایک نیا فن نظر آتا ہے۔ ان کی موجودگی میں ملکی سیاست میں اہم تبدیلیاں آئیں گی اور پرویز مشرف اقتدار میں نہیں رہ سکے گا۔ انہوں نے مردوں کی طرح جدوجہد کی۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ میں ن اور ش کی تقسیم کے بارے میں باتیں وہ  کر رہے ہیں جو کل تک مشرف کے ساتھ تھے۔ مسلم لیگ اس ملک کی بڑی جماعت ہے اور آج بھی اسکا ووٹ بنک سب سے زیادہ ہے۔ میاں نواز شریف نے تین بار  اقتدار اعلیٰ دیکھنے کے بعدبھی جیل کو چوم پسند کیا۔ ایسی قربانیاں دینے والی قیادت اور پارٹی کیسے تقسیم ہو سکتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ پہلے تو میاں نواز شریف اور شہباز شریف میں کوئی اختلاف نہیں اور اگر کوئی چھوٹی موٹی بات ہے تو اس کی بنیاد پر پارٹی تقسیم ہوجائے اس کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا۔ انہوں نے کہا کہ ہم بیگم کلثوم نواز کی برسی کے ساتھ ساتھ حضرت قائداعظم محمد علی جناح کو بھی ان کی برسی کے موقع پر خراج عقیدت پیش کر رہے ہیں،لیکن قائداعظم کے ملک میں آج خواتین کی عزتیں محفوظ نہیں ہیں۔ موٹروے پر خاتون کے ساتھ زیادتی درندگی کا بدترین مظاہرہ ہے، اس پر عمران خان کو مستعفی ہو جانا چاہیئے، وہ ریاست مدینہ کے تصور کو بدنام نہ کریں پاکستان صرف جمہوریت کے ساتھ ہی رہ سکتا ہے، جمہوریت اور جمہوری قوتوں کی بالا دستی ہو گی تو ملک ترقی کرے گا۔ جمہوریت کی گردن دبانے والے خود دب کر مٹ جائیں گے۔ مسلم لیگ ن کے رہنما عقیل انصاری کی رہائش گاہ پر بیگم کلثوم نواز کی برسی کے موقع پر قرآن خوانی کا اہتمام کیا گیا۔ سابق ایم این اے شیخ طارق رشید نے دعا کروائی۔ جس میں مخدوم جاوید ہاشمی،آصف رجوانہ، شیخ عمران ارشد، رانا شاہد الحسن اور دیگر نے شرکت کی۔

جاوید ہاشمی

مزید :

ملتان صفحہ آخر -