پسند کی 6 شادیاں کرنے والی 22 سالہ لڑکی غیرت کے نام پر بھائی کے ہاتھوں قتل

پسند کی 6 شادیاں کرنے والی 22 سالہ لڑکی غیرت کے نام پر بھائی کے ہاتھوں قتل
پسند کی 6 شادیاں کرنے والی 22 سالہ لڑکی غیرت کے نام پر بھائی کے ہاتھوں قتل
کیپشن:    سورس:   creative commons license

  

سرگودھا (ویب ڈیسک) پنجاب کے ضلع سرگودھا میں پسند کی 6 شادیاں کرنے والی بہن کو 22 سالہ بھائی نے غیرت کے نام پر قتل کرکے اسے گھر کے کمرے میں ہی دفن کر دیا۔چٹھے شوہر نے بیوی کے اغواءکا مقدمہ درج کروایا تو دورانِ تفتیش قتل کا انکشاف ہوا۔

روزنامہ جنگ کے مطابق سرگودھا کے گاؤں 17 جنوبی ٹانگوں والی کی رہائشی 30 سالہ نگہت پروین کے اغواءکا 17 اگست 2020ءکو تھانہ صدر میں اس کے چھٹے شوہر وسیم امجد نے مقدمہ درج کروایا۔

مقدمے کے اندراج کے بعد پولیس نے نگہت پروین کی تلاش شروع کی تو اس کے موبائل کی آخری کال کی لوکیشن والدین کے گھر پہنچ کر ختم ہو گئی۔پولیس کے رابطہ کرنے پر اہلِ خانہ بتاتے ہے کہ نگہت دوستوں کے ساتھ اسلام آباد گئی ہوئی ہے۔پولیس نے جدید ٹیکنالوجی استعمال کرتے ہوئے تفتیش کو آگے بڑھایا اور نگہت پروین کے 22 سالہ بھائی عبداللّٰہ ہاشم سے تفتیش شروع کی تو وہ انکشافات کرتا ہی چلا گیا۔

بھائی نے بتایا کہ بہن گزشتہ 8 سال سے بدنامی کا باعث بنی ہوئی تھی، گاؤں کے لوگ بھی بہن کے کردار کی وجہ سے ہمیں اچھا نہیں سمجھتے تھے، جب وہ چھٹی شادی کر کے گھر آئی تو میں نے کمرے میں بند کر کے فائرنگ سے قتل کیا اور کمرے میں ہی دفن کر دیا۔پولیس نے مقتولہ کے بھائی کو گرفتار کر کے اس کے قبضے سے آلہ قتل برآمد کر لیا ہے۔پولیس کا کہنا ہے کہ مقدمے کا چالان جلد مرتب کر کے عدالت کو بھجوا دیا جائے گا۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -سرگودھا -