موٹروے زیادتی کیس کا ملزم 2013 میں ماں اور بیٹی کو اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنا چکا : ذرائع

موٹروے زیادتی کیس کا ملزم 2013 میں ماں اور بیٹی کو اجتماعی زیادتی کا نشانہ ...
موٹروے زیادتی کیس کا ملزم 2013 میں ماں اور بیٹی کو اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنا چکا : ذرائع

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) گجرپورہ موٹروے زیادتی کیس کا شناخت ہونے والا ملزم عابد علی پہلے بھی ماں اور بیٹی سے اجتماعی زیادتی کرچکا ہے۔

ذرائع کے مطابق جنوبی پنجاب کے ضلع بہاولنگر کی تحصیل فورٹ عباس کا رہائشی عابد علی ولد اکبر علی 2013 میں ایک خاتون اور اس کی بیٹی کے ساتھ اجتماعی زیادتی کرچکا ہے۔ مقامی میڈیا پر سامنے آنے والی تفصیلات کے مطابق ملزم عابد علی نے 2013 میں اپنے 4 ساتھیوں کے ساتھ مل کر ایک غریب کسان کے گھر ڈکیتی کی واردات کی اور اس دوران اس کی بیوی اور بیٹی کو اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنایا۔

ملزمان کی شناخت ہونے کے بعد پنچایت نے کسان کو مقدمہ درج کرانے سے کئی روز تک روکے رکھا لیکن جب بعد میں مقدمہ درج ہوا اور ملزم گرفتار ہوا تو غریب کسان کو ڈرا دھمکا کر صلح کرلی گئی۔ اس کے بعد اہل دیہہ نے مل کر عابد علی کے خاندان کو گاؤں بدر کردیا جس کے بعد انہوں نے چھانگا مانگا میں رہائش اختیار کرلی۔

پولیس ذرائع کا کہنا ہے کہ لاہور سیالکوٹ موٹروے پر زیادتی کا نشانہ بننے والی خاتون کے کپڑوں سے ملنے والے ڈی این اے کی مدد سے ملزم عابد علی ولد اکبر علی قوم ملہی کی شناخت ہوئی ہے۔ ملزم کو ابھی تک گرفتار نہیں کیا گیا تاہم اس حوالے سے کوششیں جاری ہیں۔ ملزم کے والد کا کہنا ہے کہ اگر اس کا بیٹا واردات میں ملوث ہے تو اسے گولی مار دی جائے اسے اعتراض نہیں ہوگا۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -لاہور -