پنجاب پولیس نے موٹر وے زیادتی کیس کے دونوں ملزمان کی تصاویر جاری کردیں

پنجاب پولیس نے موٹر وے زیادتی کیس کے دونوں ملزمان کی تصاویر جاری کردیں
پنجاب پولیس نے موٹر وے زیادتی کیس کے دونوں ملزمان کی تصاویر جاری کردیں

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) پنجاب پولیس کی جانب سے موٹروے زیادتی کیس کے دونوں ملزمان کی تصاویر جاری کردی گئی ہیں۔

وزیر اعلیٰ ، وزیر قانون اور آئی جی پنجاب کی مشترکہ پریس کانفرنس میں موٹروے زیادتی کیس کے دونوں ملزمان کی تصاویر جاری کی گئی ہیں۔ پریس کانفرنس میں بتایا گیا کہ ایک ملزم کی شناخت کل رات 12 بجے عابد علی کے نام سے ہوئی جس کے موبائل ریکارڈ سے دوسرے ملزم وقار الحسن کی بھی شناخت کرلی گئی۔ (اپ ڈیٹ : ملزم وقارالحسن کا کوئی کریمنل ریکارڈ نہیں ہے جس کی تصدیق شیخوپورہ پولیس کے ترجمان نے بھی کی ہے)

آئی جی پنجاب انعام غںی نے پریس کانفرنس کے دوران بتایا کہ ملزم عابد علی کا پہلے ڈی این اے ٹیسٹ ہوا تھا جس سے موٹروے زیادتی کیس کے نمونے میچ کرگئے ، ہماری ٹیم نے بہاولنگرمیں عابدعلی کا ریکارڈ نکلوایا، اس کا فون ریکارڈ چیک کیا توپتہ چلا کہ اس کے نام پر 4 سمزتھیں، عابد علی کے فون ریکارڈ کی مدد سے اس کے ساتھی تک بھی پہنچ گئے۔

آئی جی پنجاب نے واضح کیا کہ ملزمان ابھی تک گرفتارنہیں ہوئے، سادہ کپڑوں میں پولیس گئی توملزم عابد علی اور اس کی اہلیہ فرارہوگئے، واقعہ سے متعلق تحقیقاتی ٹیمیں تشکیل دی گئی ہیں، ہماری ٹیمیں اس وقت دونوں ملزمان کے پیچھے ہیں، امید ہے بہت جلد دونوں ملزمان کو گرفتار کرلیں گے۔

دوسری جانب وزیر اعلیٰ پنجاب نے اعلان کیا ہے کہ جو بھی دونوں ملزمان کے حوالے سے کوئی معلومات فراہم کرے گا اسے 25 لاکھ روپے کا انعام دیا جائے گا۔

مزید :

اہم خبریں -علاقائی -پنجاب -لاہور -