الیکشن قریب آگئے سبزہ زار میں ترقیاتی کام شروع ،گندے نالے پرچھت نہ ڈالی جاسکی

الیکشن قریب آگئے سبزہ زار میں ترقیاتی کام شروع ،گندے نالے پرچھت نہ ڈالی جاسکی
الیکشن قریب آگئے سبزہ زار میں ترقیاتی کام شروع ،گندے نالے پرچھت نہ ڈالی جاسکی

  

لاہور (محمد نواز سنگرا/رانا جاوید اقبال) سبزہ زار کے علاقہ میں الیکشن قریب آتے ہی ترقیاتی کام شروع علاقہ کے مکینوں نے بتایا کہ سابق وزیراعلیٰ شہباز شریف نے 5 سال قبل گندا نالہ ڈھانپنے کا وعدہ کیا تھا وہ آج تک پورا نہ ہو سکا۔تفصیلات کے مطابق سبزہ زار کے علاقہ ایف بلاک کے رہائشیوں اشتیاق احمد نے بتایا کہ گزشتہ الیکشن سے قبل میاں شہباز شریف نے ایک جلسے کے دوران یہاں کے لوگوں سے وعدہ کیا تھا کہ آبادی کے قریب اور موٹر وے کے ساتھ گزرنے والے گندے نالے کو جلد از جلد ڈھانپ دیا جائے گا کیونکہ گرمیوں میں اس میں سے انتہائی تیز بدبو اور گیس کا اخراج ہوتا ہے جس سے قریبی رہائشیوں کے لوگوں کے گھروںمیں لگے ایئرکنڈیشنر اور فریج وغیرہ ایک سال بعد ہی ناکارہ ہو جاتے ہیںگندے نالے میں پیدا ہونے والے مچھر انتہائی خطرناک ہوتے ہیں جن کے کاٹنے سے بچے اور بوڑھے افراد اکثر بیمار رہتے ہیں ڈینگی کی وبا کے دوران یہاں کئی بوڑھے افراد اپنی جان گنوا چکے ہیں اب الیکشن قریب ہیں تو پچھلے ماہ ہمارے بلاک میں ایک پارک بنایا گیا ہے جس کو کلثوم نواز کے نام منسوب کیا گیا ہے ابھی اس میں کام جاری ہے اس کا افتتاح بھی میاں شہباز نے پندرہ روز قبل کیا ہے اب الیکشن قریب ہیں تو سیاست دانوں کو بھی عوام کی یاد آ گئی ہے پہلے پانچ سالوں میں ہم نے اپنے علاقہ کے ایم پی اے یا ایم این اے کو کبھی یہاں سے گزرتے بھی نہیں دیکھا اب ان کی پارٹی کے سربراہ بھی آناشروع ہو گئے ہیں مشتاق احمد نے بتایا کہ یہاں سیکورٹی نظام کا یہ حال ہے کہ روزانہ ڈکیتی کی وارداتیں معمول ہیں پولیس نے ایک بھی ڈاکو کو گرفتار نہیں کیا چند روز قبل یہاں پر ڈاکوﺅں نے موٹرسائیکل چھینے کے بعد دبئی سے آئے ہوئے نوجوان کو فائرنگ کرکے ہلاک کردیا جس کے تین چھوٹے چھوٹے بچے ہیں اب وہ اپنے باپ کے سائے سے محروم ہو گئے کون ان کو انصاف دلوائے گا یہاں کی پولیس جس قسم کی ہے اس کے بارے میں صرف ہم لوگ ہی نہیں پوری دنیا جانتی ہے پاکستان کی صرف پولیس ٹھیک ہو جائے تو میرے خیال میں 90 فیصد جرائم ختم ہو جائیں گے محمد عبداللہ نے بتایا کہ یہاں کی سٹریٹ لائٹ سرکاری طور پر نہیں لگتی ان کو یہاں کی سوسائٹی لگواتی ہے ویسے تو یہ آبادی ایل ڈی اے کی کالونی ہے مگر یہاں کام رہائشی آپس کے تعاون سے کرتے ہیں سرکاری محکموں کی حالت اور ان کے کام کرنے کے طریقوں سے ہر کوئی بڑی اچھی طرح سے واقف ہے محمدسجاد نے بتایا کہ یہاں صفائی کا کوئی خاص انتظام نہیں جگہ جگہ کوڑے کے ڈھیر لگے ہیں کئی کئی دن سینٹری ورکر کام پر نہیں آتے نوید نے بتایا کہ یہاں پر ویگن اور بس سٹاپ بنائے گئے ہیں جن پر کوئی چھت نہیں بنائی اور نہ ہی وہاں پر انتظار کرنے والے مسافر کیلئے پانی کا کوئی انتظام ہےاوپر سے ٹیکس لینے والے عوام کو ذلیل و خوار کرتے ہیں۔

مزید : الیکشن ۲۰۱۳