عدالت کی سابق مصری صدر کیخلاف دوبارہ مقدمے کی سماعت سے معذرت

عدالت کی سابق مصری صدر کیخلاف دوبارہ مقدمے کی سماعت سے معذرت
 عدالت کی سابق مصری صدر کیخلاف دوبارہ مقدمے کی سماعت سے معذرت

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

قاہرہ(مانیٹرنگ ڈیسک)مصر کے سابق صدر حسنی مبارک پر بدعنوانی اور سازش کے الزامات کی دوبارہ سماعت پر بینچ نے کیس سننے سے معذرت کر لی اور مزید کاروائی کے لئے مقدمہ ایپل کورٹ کو بھیج دیا ۔ سابق صدر کے خلاف بدعنوانی اور بغاوت کے دنوں میں لوگو ں کے قتل عام کی سازش کے مقدمے کی سماعت شروع ہوتے ہی بنچ کے سربراہ نے کیس سے علیحدگی اختیار کرنے کا اعلان کیا ہے۔میڈیا رپورٹس کے مطابق جسٹس مصطفٰی حسن عبداللہ نے کہا کہ وہ اس مقدمے کو اپیل کورٹ کی طرف بھیج رہے ہیں کیونکہ اس کیس پر نظرثانی کرنے میں انہیں اچھا محسوس نہیں ہو رہا۔توقع ہے کہ عدالت اس مقدمے کی سماعت کے لیے نئے بنچ کا اعلان کرے گی۔واضح رہے کہ مصر کی اپیل کورٹ نے مارچ کے اوائل میں سابق صدر حسنی مبارک پر تیرہ اپریل سے دوبارہ مقدمہ چلانے حکم دیا تھا۔ سابق صدر حسنی مبارک پر الزام ہے کہ انھوں نے دو ہزار گیارہ میں شروع ہونے والی بغاوت کے دوران لوگوں کو قتل کرنے کی سازش کی تھی جس بغاوت کے دوران آٹھ سو پچاس کے لگ بھگ افراد ہلاک ہوئے تھے۔گذشتہ برس جون میں انھیں عدالت نے عمر قید کی سزا سنائی تھی لیکن جنوری میں ایک عدالت نے اس فیصلے کے خلاف اپیل منظور کر لی تھی جس کا فیصلہ مارچ میں سامنا آیا تھا۔