امریکی مسلح افواج کے سربراہ نے فوجی اہلکاروں کوسیاست سے دور رہنے کر دی

امریکی مسلح افواج کے سربراہ نے فوجی اہلکاروں کوسیاست سے دور رہنے کر دی

  



واشنگٹن (اے پی پی) امریکی مسلح افواج کے سربراہ جنرل جوئے ڈنفورڈ نے فوجی اہلکاروں کو ہدایت کی ہے کہ وہ سیاست سے دور رہیں اور ملک میں جاری صدارتی انتخابات کی مہم میں اپنے سیاسی خیالات کا اظہار نہ کریں۔ چیئرمین جوائنٹ چیفس آف سٹاف جنرل جوئے ڈنفورڈ جو امریکی وزیر دفاع ایش کارٹر کے سینئر ترین مشیر بھی ہیں اس حوالہ سے جلد تمام فوجی اہلکاروں کے نام ایک خط بھی جاری کرنے والے ہیں ‘ جنرل ڈنفورڈ کے ترجمان امریکی بحریہ کے کیپٹن گریگ پکس نے اس حوالے سے ایک بیان میں کہا کہ ذرائع ابلاغ کی طرف سے متعدد فوجی افسروں سے صدارتی امیدواروں کے بیانات پر تبصرہ کرنے کے کہا گیا ہے ۔ ان صدارتی امیدواروں میں ٹیڈ کرز جیسے امیدوار بھی شامل ہیں جنہوں نے عراق اور شام کے بعض علاقوں میں کارپٹ بمبنگ کا مطالبہ کیا ہے ترجمان نے کہا کہ یہ صورتحال فوج کو سیاست میں گھسیٹنے کے مترادف ہے اور اس کے نتائج خطرناک ہو سکتے ہیں۔ ترجمان نے کہا کہ امریکی فوج کی روایت ہے کہ وہ خود کو سیاست سے علیحدہ رکھتی ہے اور فوج اپنی یہ روایت برقرار رکھے گی۔ امریکی فوج کے سربراہ نے صحافیوں کی طرف سے فوجیوں سے سیاسی صورتحال بارے تسلسل کے ساتھ سوالات کو بھی تشویش ناک قرار دیا۔ انہوں نے کہا کہ بعض صحافیوں نے خود ان سے بھی ایسے ہی سولات کئے ۔

مزید : عالمی منظر