ملا کنڈ ڈویژن مین کسٹم ایکٹ اور ٹیکس کیخلاف شٹرڈاؤن ہڑتال اور مظاہرے جاری

ملا کنڈ ڈویژن مین کسٹم ایکٹ اور ٹیکس کیخلاف شٹرڈاؤن ہڑتال اور مظاہرے جاری

  



مٹہ ،الپوری ،تھانہ ،چترال (نمائندگان پاکستان )مالا کند ڈویثرن بھر میں شٹرڈاون ہڑتال کاروباری مراکز بند تفصیلا ت کے مطابق گزشتہ روز ما لا کنڈ ڈویثر ن میں کسٹم ایکٹ کے خلاف تاجر برادری نے مکمل اپنے دکانیں صبح سے بند کر کے ہڑ تال کو کا میا ب بنا یا اس طرح مٹہ بازار کے تا جر برادری نے اتفاق ایسوسی ایشن کی کا ل پر صبح سے اپنے دکانیں بند کر کے ہڑ تا ل میں حصہ لیا اسکی علاہ نجی سکولوں نے بھی چھٹی کا اعلا ن کر دیا ۔اس مو قع پ ضلع سوات کے نائب ناظم عبد الجبار خا ن،N P کے صو بائی نا ئب صدر ایوب خا ن،ویلج تحصیل نا ظمین چیر مین شیر بہادر خان،سعید خان ایڈوکیٹ،ضیا ء اللہ خان ،پر ویز خان ،خورشید خان ،مٹہ بازار صدر حا جی عبدالقیوم ،و دیگر نے میڈ یا سے گفتگو کرتے ہو ئے کہا کہ ہم کسی بھی حا ل میں ما لا کنڈ ڈویثرن میں ٹیکس لگا نے نہیں دینگے اور جس نے یہ فصلہ کیا ہے ۔وہ مالا کنڈڈویثرن کی غریب عوام کا حق پر ڈاکہ ڈال رہے ہیں اگر اس کیلئے ہمارے ما ل و جا ن کی قر بانی اجائے تو ان کیلئے تیا ر ہے مگر ٹیکس لگا نے کو نہیں انہو ں مز ید کہا کہ ضلع سوات میں تما م سیا سی پارٹیا ں اس کیلئے ایک ہو اہے اور وہ کسی بھی قر بانی سے دریغ نہیں کر ینگے۔کسٹم ایکٹ کے خلاف چترال بازار مکمل شٹر ڈاؤن ہڑتال ، کارو بار زندگی مفلوج ہو کر رہ گئی اس قسم کی کامیاب ترین ہڑتال کی مثال نہیں ملتی ہے پی آئی اے چوک میں ہڑتالی دکانداروں سے خطاب کرتے ہوئے متحدہ تجار یونین کے صدر حبیب حسیں مغل سینئر نائیب صدر عبادالرحمان نا ئب صدر عبدلواحد جنرل سیکیریٹری الحاج منظور قادر اور پاکستان مسلم لیگ (ن) کے ترجمان نیاز اے نیازی ایڈوکیٹ ، جماعت اسلامی کے مولانا اسرارلدین الہلال ، دیگر مقررین نے حا لیہ حکومتی اس اقدام کی شدید مخالفت کی گئی اور مقررین نے کہا کہ مالاکنڈ ڈویثرن میں کسٹم ایکٹ نافذ کرنے کے اقدام کو حکومت کی جانب سے ظالمانہ اقدام قرار دیا۔مقررین نے کہا کہ چترال بلکہ پورا مالاکنڈ دویثرن زلزلوں اور سیلابوں کی وجہ سے ملک کے دیگر اضلاع سے بیس سال پیچھے رہ گئی ہے، اس وقت حکومت کے امداد کے بجائے کسٹم ایکٹ نافذ کرنا عوام کے سراسر نا انصافی اور بد نیتی پر مبنی ہے اور پورا مالاکنڈ دویثرن آ ئین کی رو سے 2060 ؁ء تک کسی بھی قسم کے ٹیکس بری زمہ ہے اس موقعے پر مقررین نے صدر پاکستان ، وزیرآعظم پاکستان اور گورنر کے پی کے سے مطالبہ کیا کہ اس متنازعہ اور ظالمانہ اقدام کو فوراََواپس لیا جائے۔ انجمن تاجرانا ن تھانہ کی اپیل پر کسٹم ایکٹ کے خلاف زبردست احتجاجی مظاہرہ ۔ مظاہرے میں مختلف سیاسی پارٹیوں کے نمائندوں اور علاقے کے لوگوں نے کثیر تعداد میں شرکت کی۔ قبل ازیں جلوس نکالا گیا جس میں مظاہرین نے کالی جھنڈیاں اور حکومت کے خلاف بینرز اُٹھا رکھے تھے۔حکومت کی طرف سے ملاکنڈ ڈویژن میں نافذ کردہ کسٹم ایکٹ کے خلاف انجمن تاجران تھانہ بازار کی اپیل پر ایک احتجاجی مظاہر ہ منعقدہوا۔ احتجاجی جلسہ سے پاکستان پیپلز پارٹی کے صوبائی جنرل سیکرٹری اور سابق صوبائی وزیر خزانہ انجینئر ہمایوں خان ، انجمن تاجران مالاکنڈ ڈویژن کے صدر حاجی شاکر اللہ خان ، پی پی پی کے ضلعی جنرل سیکرٹری حاجی محمد صدیق ، عوامی نشنل پارٹی کے اظہار اللہ خان۔ مزدور یونین کے صدر فضل ربی کامریڈ، پاکستان مسلم لیگ (ن) کے علی محمد ، پاکستان تحریک انصاف کے ضلعی کونسلرزفضل منان بازدا،افضل حسین، یوتھ کونسلر نور اللہ تھانوی، جماعت اسلامی کے رہنماء ارشد علی، حاجی نوشیروان، ٹرانسپورٹ صدر ادریس بنوری، تھانہ بازار صدر فضل قادر اور جنرل سیکرٹری سہیل رحمٰن اور دیگر رہنماؤں نے خطاب کیا۔ مقریرین نے کہا کہ اس وقت پاکستان کا بچہ بچہ مقروض ہے اور آزادی کے باوجود آئی ایم ایف اور ورلڈ بنک کے غلام اور ان کے فیصلوں کے پابند ہیں۔ انہوں نے کہا ہم ان پنجابی سامراج کو کسٹم نہیں دے سکتے جو اپنا سرمایہ بیرونی ممالک میں منتقل کرتے ہیں اور بنیادی سہولیات کی عدم فراہمی کے باوجود ہم سے کسٹم لیتے ہیں۔ مقریرین نے کہا کہ جس ملک کے سرمایہ دار اپنے ملک میں اپناسرمایہ نہیں لگاتے اس ملک میں بیرونی سرمایہ کار کیسے سرمایہ لگائیں گے۔ مظاہرین نے مالاکنڈ ڈویژن کے ان ارکان اسمبلی اور سنیٹروں کا شکریہ ادا کیا جنہوں نے اپنے استعفے اس سلسلے میں پہلے ہی جمع کئے ہیں۔ مقریرین نے کہا کہ بدقسمتی سے ہمارے سیاسی رہنماء اور ارکان اسمبلی بھی اس سلسلے میں خرگوش کے نیند سوئے ہوئے ہیں ٹریڈ یونین نے دس دن کے اندر اندر کسٹم ایکٹ واپس لینے کا مطالبہ کیا بصورت دیگر انہوں نے شاہراہ مالاکنڈ صوفی محمد کی طرح مکمل طورپر بند کرانے کی دھمکی دیدی۔ ما لاکنڈ ڈویژن میں کسٹم ایکٹ کے خلاف شانگلہ بار ایسو سی ایشن ،شانگلہ ٹریڈ یونین کی کال پر شانگلہ کے مرکزی بازار الپوری سمیت دیگر بازاروں میں شٹر ڈاون ہڑ تال،احتجاجی مطاہرے،مالاکنڈ دویژن کے کسی بھی حصے میں ٹیکس نہیں مانتے،یہاں پر ٹیکس لگانا سراسر ظلم اور حکومتی بد نیتی ہے،حکومت قدرتی اور مصنوعی آفات سے متاثرہ ڈویژن کو ریلیف پیکجز دینے کے بجائے تحفے میں کسٹم ایکٹ نظام دے رہا ہے جومسلسل زیادتی اور نا انصافی ہے،مالا کنڈ ڈویژن میں نافذ ہونے والے کسٹم ایکٹ کے واپسی تک جدو جہد اور مظاہرے جاری رہینگے۔الپوری میں احتجاجی مظا ہرے سے مقررین کا خطاب۔تفصیلات کے مطابق ڈویژن بھر کی دیگر اضلاع کی طرح شانگلہ میں بھی منگل کے روز بار ایسو سی ایشن اور ٹریڈ یونین کی کال پر شانگلہ کے مرکزی بازار الپوری،لیلونئی،بیلے بابا،حافظ الپوری بازارسمیت ضلع کے دیگر کاروباری اور تجارتی مراکز بند رہے،الپوری میں مظاہرے کی قیادت شانگلہ بار کے سابق صدر شاہ فواد خان ایڈو کیٹ اور ٹریڈ یونین کے صدر سید نظر ، اکرام الدینکر رہے تھے،مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے شاہ فواد خان ایدوکیٹ نے کہا کہ مالا کنڈ ڈویژن مسلسل قدرتی اور مصنوعی آفات کی زد میں ہے ،مالا کنڈ ڈویژن میں کاروبار زندگی اس ناگزیر حا لات میں ٹھپ ہو کر رہ گئی ہے،مرکزی اور صوبائی حکومتیں ما الاکنڈ دویژن میں تجارتی حب سمیت انڈسٹری زون قیام کریں ،یہاں ما لا کنڈ ڈویژن میں ٹیکس کا نفاذ یہاں کے افت زدہ عوام کے ذخموں پر نمک چھڑکانے کی مترادف ہے ،یہ نا انصافی نہیں ہونے دینگے،مالا کنڈ ڈویژن میں ٹیکس لگانا یہاں کے عوام کے ساتھ زیادتی ہوگی۔ٹیکس کی نفاذ کو کسی بھی صورت قبول نہیں کیا جائے گا۔احتجاجی مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے شانگلہ ٹریڈ یونین کے صدر سید نظر نے کہا کہ مالا کنڈ ڈویژن میں پچھلے تین دہائیوں سے مسلسل عذاب نے یہاں کی تجارت،معشیت اور کاروبار ختم کی ہے ،ایسے وقت میں حکومت اور انٹرنیشنل ڈونرز کو ما لاکنڈ ڈویژن کے عوام کے ساتھ ہمدردی کر کے تباہ شدہ سٹرکچر اور انفرا سٹرکچر کوتعمیر کرنا چاہہیے نہ کہ ان کے منہ سے خوراک کا اخری نوالہ بھی چھین لے،کسٹم ایکٹ کو کسی صورت نافذ نہیں ہونے دینگے،کسٹم ایکٹ کو واپس نہ لیا گیا ،تو شانگلہ کے تمام کاروباری مراکز کو بند کر کے گورنر ہاوس کے سامنے دھرنا دینگے۔احتجاجی مظاہرے سے شیبرخان ایڈوکیٹ نے کہا کہ ما لا کنڈ ڈویژن میں کسٹم ایکٹ کا نفاذ یہاں کے عوام کے ساتھ مذاق ہے ،کسٹم ایکٹ کے خلاف شانگلہ سمیت ڈویژن بھر کے عوام ،وکلاء،تاجر،صحا فی برادری ،دانشور ،سیاست دان متحد ہے ۔احتجاجی مظاہرے سے صدر پا کستان کمیسٹس ایند ڈرگسٹس ایسوی ایشن شانگلہ کے صدر اکرام الدین۔شانگلہ بار ایسو سی ایشن کے جنرل سیکر ٹری جہانزیب خان ایڈوکیٹ اور دیگر وکلاء اور ٹریڈ یونین کے عہدیداران نے بھی خطاب کیا ۔ادھرپورن ،چکیسر،بشام،کروڑہ،شاہپور،کانا،ڈھیرئی سمیت دیگر چھوٹے بڑے بازار اور کا روباری مراکز میں بھی ہڑتال رہی اور کسٹم ایکٹ کے خلاف احتجاج ہوئی ۔

مزید : کراچی صفحہ آخر


loading...