گندم کی کٹائی و برداشت کا عمل شروع، خریداری مراکز میں عملہ تعینات

گندم کی کٹائی و برداشت کا عمل شروع، خریداری مراکز میں عملہ تعینات

  



ٹھٹھہ صادق آباد، گڑھا موڑ، میلسی، بہاولپور، رحیم یار خان (نمائندگان) جنوبی پنجاب میں گندم کی کٹائی و برداشت کا عمل شروع ہوگیا ہے۔ خریداری کیلئے محکمہ خوراک کی جانب سے عملہ تعینات کر دیا گیا۔ کسانوں نے باردانہ کی تقسیم کا عمل شفاف بنانے کا مطالبہ کیا ہے۔ ٹھٹھہ صادق آباد سے نمائندہ پاکستان کے مطابق ٹھٹھہ صادق آباد نواح میں ہزاروں ایکٹر زرعی رقبہ پر گندم کی فصل کاشت کی گئی ہے،گندم کی فصل پک کر تیار ہونے کے بعد ٹھٹھہ صادق آبادونواح میں گندم کی کٹائی وبرداشت شروع ہوگئی ہے،ہار ویٹرمشین ،ریپر مشین ،تھریشر(بقیہ نمبر11صفحہ12پر )

اور ہاتھ سے گندم کی کٹائی وبرداشت جاری ہے،گندم کی کٹائی وبرداشت شروع ہونے پر ٹھٹھہ صادق آباد ونواح میں کسانوں کی طرف سے مٹھائی تقسیم کی گئی،گندم کی کٹائی وبرداشت شروع ہونے کے باوجود محکمہ خوراک پنجاب کی طرف سے ٹھٹھہ صادق آباد فوڈ سنٹر پر دسرکاری سطح پر ٹھٹھہ صادق آباد میں گندم خریداری اانتظامات شروع نہ کیے جاسکے ہیں۔ دریں اثناء ترقی پسند زمینداروں حاجی محمد منشاء،چوہدری اختر رسول نے ٹھٹھہ صادق آباد اور نواحی 35سے زائد چکوک و موضع جات کے زرعی رقبہ کے لحاظ سے محکمہ خوراک پنجاب کا ایک فوڈ سنٹر ناکافی ہے لہذاٹھٹھہ صادق آباد میں پاسکوگندم خریداری سنٹر بھی قائم کیا جائے۔گڑھا موڑ سے سپیشل رپورٹر کے مطابق پاسکو سنٹر گڑھا موڑ نے 2103 میں 100884 بوری گندم خرید کی تھی اور 2014 میں 1080698 بوری گندم خرید کی جبکہ 2015 میں 39930 بوری خرید کی جاسکی اور اس سال صرف 20000 بوری کی خرید کی جائے گی جس کو لے کر کسانوں کی شدید مشکلات کا سامنا ہے اور گندم 1100 سے بھی کم ریٹ پر گڑھا موڑ میں فروخت ہو رہی ہے۔ چیئرمین گڑھا موڑ چوہدری ظفر اقبال جٹ،وائس چیئرمین محمد افضل جاوید،فلک شیر رتھ،ڈاکٹر فاروق لودھی،حاجی عابد شیر،ملک حفیظ عزیز،ظفر اقبال اور دیگر نے احتجاج کرتے ہوئے حکومت سے مطالبہ ہے کہ پاسکو سنٹر گڑھا موڑ کا کوٹہ بڑھا یا جائے۔میلسی سے نما ئندہ خصوصی کے مطابق ضلع وہا ڑی میں پاسکو پچیس اپر یل سے گندم کی خریداری کریگی اگر موسم ایسے خشک رہا تو اس سے قبل بھی ممکن ہو سکتی ہے ضلع وہا ڑی میں پر چیز ٹارگٹ تیرا لاکھ بوری ملا ہے ان خیالا ت کا اظہار زونل ہیڈ ضلع وہا ڑی پاسکو راؤ محمد اکرم نے میلسی کے خریداری مرا کز کے دورہ کے موقع پر میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ خریداری کا طریقہ کار وہی ریونیو خسرہ گرداوری کی شفارشات کی روشنی میں کی جائیگی میلسی میں اٹھارہ انیس خرید اری مراکز قائم کیے ہوئے ہیں تحصیل میلسی میں دو پرا جیکٹ منیجر خریداری کی نگرانی کرینگے ایک سو چالیس روپے فی بور سیکورٹی لی جائیگی اور تیرا روہے فی من لوڈنگ کا خرچہ دیا جائیگا۔ بہاولپور سے بیورورپورٹ کے مطابق ضلع بہاولپور میں 28مراکز خریداری گندم مقرر کئے گئے ہیں جن پر دولاکھ 77ہزار ٹن گندم خرید کی جا ئے گی۔ جس کیلئے محکمہ خوراک کا عملہ تعینات کر دیا گیا ہے ۔ خریداری کے تمام انتظاما ت مکمل کر لئے گئے ۔ ڈسٹرکٹ فوڈ کنٹرولر تنویر نصر ت وڑائچ نے ایک پریس ریلیز میں بتا یا ہے کہ گندم مارکیٹ سے بہتر ریٹ 1300روپے فی من خرید کی جا ئے گی۔ سابقہ سال کی نسبت 8بوری کی بجائے 10بوری فی ایکڑ فراہم کی جا ئے گی۔ بار دانہ کی فراہمی کیلئے پہلے 5دن ساڑھے 12ایکڑ تک کے حامل چھوٹے کسانوں کیلئے مختص کئے گئے ہیں۔ کاشتکاروں کو 9روپے فی بوری ڈلیوری چارجز کی ادائیگی کر نا ہو گی۔ تھر ڈ پارٹی آڈٹ کے ذریعے مکمل شفافیت کو یقینی بنا یا جا ئے گا۔ رحیم یارخان سے بیورونیوزکے مطابق ایڈیشنل ڈسٹرکٹ کلکٹر شوذب سعید کی زیر صدارت گندم خریداری مہم2016/17کے انتظامات کا جائزہ لینے کے لئے منعقدہ اجلاس میں محکمہ خوراک کی جانب سے ڈسٹرکٹ فوڈ کنٹرولر میاں محبوب اختر کی بریفنگ۔اجلاس میں ڈپٹی ڈائریکٹر خوراک چوہدری محمد اجمل، اسسٹنٹ کمشنرز شکیل بھٹی، چوہدری عبدالغفار، ای ڈی او زراعت ظفر یاب حیدر سمیت ضلع بھر کے فوڈ سینٹرز انچارج اور کوارڈینیٹرز نے شرکت کی۔اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے ایڈیشنل ڈسٹرکٹ کلکٹر شوذب سعید نے کہا کہ باردانہ کی اجراء میرٹ پر کیا جائے گا اور اس میں کسی قسم کی سفارش اور اقرباء پروری کو برداشت نہیں کیا جائے گا تاہم پہلے پانچ دن چھوٹے کاشتکاران جن کا رقبہ ساڑھے بارہ ایکڑ سے کم ہے ان کو باردانہ چلت کیا جائے گا۔باردانہ پہلے آئیے پہلے پائیے کی بنیاد پر جاری کیا جائے اور ریکارڈ کو مکمل رکھا جائے کسی بھی مقام پر سیریل میں تضاد نہیں ہونا چاہیے۔کاشتکار ہمارے ملک کے لئے سرمایہ افتخار ہیں ان کی توقیر کا ہر صورت خیال رکھا جائے۔ڈپٹی ڈائریکٹر فوڈ چوہدری محمد اجمل نے کہا کہ تمام سینٹر انچارج اپنے مقررہ ٹارگٹ سے زائد باردانہ ہر گز چلت نہیں کریں گے اور اتنا ہی باردانہ چلت کیا جائے جتنی درخواستیں موصول ہو جائیں ۔اجلاس میں اسسٹنٹ کمشنرز شکیل بھٹی، چوہدری عبدالغفار اور ای ڈی او زراعت ظفر یاب حیدر نے بھی شرکت کی جبکہ اختتامی سیشن سے قبل کاشتکار تنظیموں کے نمائندوں ، کوارڈینیٹرز اور سینٹرز انچارج نے بھی اپنی مختلف تجاویز سے آگاہ کیا۔

گندم

مزید : ملتان صفحہ آخر