پانامہ لیکس کے باعث برطانیہ میں روایتی احترام ختم، کھلی تنقید کا ماحول پیدا ہو رہا ہے: تجزیہ کار

پانامہ لیکس کے باعث برطانیہ میں روایتی احترام ختم، کھلی تنقید کا ماحول پیدا ...
پانامہ لیکس کے باعث برطانیہ میں روایتی احترام ختم، کھلی تنقید کا ماحول پیدا ہو رہا ہے: تجزیہ کار

  



لندن (ویب ڈیسک) پانامہ لیکس کے باعث برطانوی سیاستدانوں مالی معاملات کے حوالے سے انکشافات نے برطانیہ میں روایتی احترام اور وقار کو آزادانہ اور کھلی تنقید والے ماحول میں تبدیل کر دیا ہے۔ مبصرین کا کہنا ہے برطانوی وزیراعظم ڈیوڈ کیمرون نے اتوار کے روز اپنے گزشتہ 6 سالوں کے ٹیکس کی سمری جاری کی اور پارلیمنٹ میں خطاب کے دوران کہا کہ اپوزیشن اور دیگر رہنماﺅں اور برطانیہ کے مستقبل کے متوقع وزراءاعظم کو بھی اپنے ٹیکسز کی تفصیلات سامنے لانا چاہئیں۔ ڈیوڈ کیمرون کے بعد وزیر خزانہ جارج اوسیورن اور لندن کے میئر بورس جانسن اور اپوزیشن کی لیبر پارٹی کے رہنما جیرمی کاربن کے بارے میں بھی توقع کی جا رہی ہے کہ وہ ڈیوڈ کیمرون کی تقلید میں اپنے ٹیکسز کی تفصیلات سامنے لائیں گے۔ اخبار ”ٹائمز“ کے کالم نگار میتھیو ہارس نے کہا حقیقی جمہوریت کو خوش آمدید ہے وقت تبدیل ہو رہا ہے اب وہ دور آ چکا ہے جب اعتماد اور احترام اور وقار رخصت ہو چکے ہیں۔

مزید : بین الاقوامی


loading...