الطاف نے 7 روز میں را سے تعلقات کا اعتراف نہ کیا تو ثبوت پیش کرونگا: شہر یار نیازی

الطاف نے 7 روز میں را سے تعلقات کا اعتراف نہ کیا تو ثبوت پیش کرونگا: شہر یار ...
الطاف نے 7 روز میں را سے تعلقات کا اعتراف نہ کیا تو ثبوت پیش کرونگا: شہر یار نیازی

  



کراچی(ویب ڈیسک)برٹش کونسل کے ڈپٹی ہیڈ آف مشن شہر یار نیازی نے کہا ہے کہ الطاف حسین کی برطانوی حکام سے ملاقات اور 'را'سے ان کے تعلق سے متعلق کہی گئی بات پر وہ قائم ہیں، وہ کسی بھی قانونی کارروائی کا سامنا کرنے کو تیار ہیں۔ ایک انٹرویو میں انہوں نے کہا کہ الطاف حسین کی برطانوی حکام کے ساتھ ملاقات کی ریکارڈنگ موجود ہے ، اعترافی بیانات بھی ہیں، جن افراد کے سامنے انہوں نے "را"سے تعلق کا اعتراف کیا، وہ بھی موجود ہیں۔ تمام ثبوت سکاٹ لینڈ یارڈ نے جمع کئے تھے۔انہوں نے کہا کہ ایم کیو ایم اور الطاف حسین کی ٹیم کو آپس میں نہ ملایا جائے ، پاکستان میں صرف چند افراد ہی "را" سے اپنے قائد کے تعلق کے بارے میں جانتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ الطاف حسین کی ٹیم کا'را'سے معاہدہ دستاویزی شکل میں ہے جس میں بہت ساری چیزیں شامل ہیں ،جاسوسی اور تخریب کاری کے معاملات بھی شامل ہیں -یہ معاہدہ الطاف حسین، ا ن کی ٹیم اور را کے درمیان 2001 اور 2005 کے دوران ہوا۔ معاہدے میں تخریبی سرگرمیوں ، اداروں میں گھس کر کام کرنے ، معلومات حاصل کرنے ، کراچی اور بلوچستان کے حالات خراب کرنے جیسی باتیں شامل ہیں۔ معاہدے کے تحت الطاف حسین کی ٹیم بلوچ باغیوں کی معاونت بھی کرتی رہی ہے۔شہریار نیازی نے انکشاف کیا کہ ایک برطانوی ڈپلو میٹک افسر جب الطاف حسین سے معلومات حاصل کرنے گئے تو الطاف حسین نے از خود ہی را کے بارے میں بیان دینا شروع کردیا جبکہ ان سے اس کے بارے میں کچھ پوچھا نہیں گیا تھا۔اس پر برطانوی افسر نے الطاف حسین کو روکا اور کہا کہ ان کا یہ بیان ریکارڈ کیا جائے گا اوروہ بھی ایک گواہ کی موجودگی میں -الطاف حسین نے برطانوی افسر کو اس کی اجازت دیدی- اس میٹنگ میں الطاف حسین نے سینہ ٹھونک کر فخریہ طور پر یہ دعویٰ کیا کہ ہاں میں را کے لئے کام کرتا ہوں،یہ میٹنگ اور اس میں ہونے والی گفتگو کورٹ میں ثابت کی جاسکتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ قائد ایم کیو ایم سات دن کے اندر اس ملاقات کا اعتراف کریں اور پاکستانیوں سے معافی مانگیں ، وگرنہ ٹھیک سات دن بعد الطاف حسین کی برطانوی حکام سے ملاقات کے ثبوت وہ میڈیا کو دینا شروع کر دیں گے ، برطانیہ جا کر الطاف حسین کو قانونی نوٹس بھی بھیجیں گے۔ انہوں نے کہا کہ "را"نے محمد انور کو "تھینک یو"کی ای میل بھیجی تھی۔سابق وزیر داخلہ رحمان ملک کو ایم کیو ایم کے 'را'سے روابط سے متعلق برطانوی حکام نے بریفنگ دی تھی، مگر وہ الطاف حسین کے پاس گئے اور انہیں کہا کہ ان کی برطانوی وزیر داخلہ سے بات ہو گئی ہے ، الطاف حسین مقدمات سے بچ جائیں گے جس پر برطانوی حکام نے دوبارہ رحما ن ملک سے رابطہ کیا اور کہا کہ ان کی جانب سے وہ کیسا وعدہ الطاف حسین سے کر آئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ رحمان ملک کے جھوٹ پر انہیں دکھ ہوا۔رحمان ملک سمیت جس نے بھی انہیں قانونی نوٹس بھیجنا ہے ، بھیج دے ، وہ سامنا کرنے کے لئے تیار ہیں۔شہریار نیازی کے الزامات پر رحمان ملک نے اپنا ردعمل ظاہر کرتے ہوئے انہیں قطعی بے بنیاد قرار دیا -انہوں نے شہریار نیازی سے بھی لاتعلقی کا اظہار کیا۔ کراچی میں برطانوی قونصلیٹ اور ایم کیو ایم کے ہیڈ کوارٹرز نائن زیرو نے الزامات پر کوئی تبصرہ نہیں کیا۔

مزید : کراچی


loading...