جگر کی فروخت کیلئے غریبوں کو بھارت سمگل کرنیکا مکر وہ دھندا بے نقاب

جگر کی فروخت کیلئے غریبوں کو بھارت سمگل کرنیکا مکر وہ دھندا بے نقاب
جگر کی فروخت کیلئے غریبوں کو بھارت سمگل کرنیکا مکر وہ دھندا بے نقاب

  



اسلام آباد( ویب ڈیسک)سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے داخلہ میں وقار نامی شہری نے انکشاف کیا ہے کہ پاکستان اور بھارت میں سرگرم ایک بڑا گینگ پاکستان کے غریب لوگوں کو پیسوں کالا لچ دیکر جگر کی فروخت کیلئے بھارت سمگل کرتاہے ، جگر کا حصہ نکالنے کے بعد رقم بھی نہیں دی جاتی ، حقائق بتانے کی صورت میں مارنے کی دھمکیا ں دی جاتی ہیں واقعات میں محکمہ پاسپورٹ اینڈ امیگریشن ،ایف آئی اے اور پولیس اہلکاربھی ملوث ہیں جس پر کمیٹی نے معاملے پر شدید تحفظات کااظہار کرتے ہوئے وزارت داخلہ سے دوہفتے میں گینگ کیخلاف تحقیقات کے بعد سخت ایکشن لینے اور مکمل رپورٹ جمع کرانے کی ہدایت کی ہے اور کہا کہ تحقیقات کے دوران متعلقہ شخص کو مکمل سکیورٹی فراہم کی جائے جبکہ سینیٹر محمد علی سیف کو اس حوالے سے فوکل پرسن مقرر کر دیا گیا۔منگل کو کمیٹی کا اجلاس چیئر مین سینیٹر رحمن ملک کی زیر صدارت ہوا،کمیٹی کے اجلاس میں بچوں کو جسمانی سزا کی ممانعت کا بل بھی زیر بحث آیا جو سینیٹر سلیم مانڈوی والا کی طرف سے سینیٹ کے اجلاس میں پیش کیا گیا تھا اور کمیٹی کو بھیجا گیا تھا۔بل میں گھروں ، تعلیمی اداروں میں بچوں کے ساتھ رویئے اور کمر عمر بچوں کے حوالے سے عدالتی نظام میں مختلف تبدیلیاں تجویز کی گئیں۔ بل پر بحث کے دوران ممبران نے تجویز پیش کی کہ اگر یہ بل گھروں میں بچوں کے ساتھ رو یئے پر بھی لاگو کیا جائے گا تو اس سے خاندانی نظام متاثر ہوگااور والدین کے احترام میں کمی آئے گی۔

مزید : اسلام آباد


loading...