مندا جاری، انڈیکس مزید155پوائنٹس نیچے چلا گیا

مندا جاری، انڈیکس مزید155پوائنٹس نیچے چلا گیا

کراچی (اکنامک رپورٹر) ایمنسٹی اسکیم سپریم کورٹ میں چیلنج ہونے کی اطلاعات کے باعث جمعرات کو سرمایہ کار وں نے حصص کی فروخت کو ترجیع دی جس کے نتیجے میں مندی چھائی رہی اورکے ایس ای 100 انڈیکس154.79 پوائنٹس کی کمی سے46331.71ائنٹس کی سطح پر آگیا جب کہ 54.75فیصد حصص کی قیمتوں میں کمی ریکارڈ کی گئی جس سے مارکیٹ کی سرمایہ کاری مالیت میں19 ارب30 کروڑ35لاکھ روپے کی کمی ہوئی البتہ حصص کی لین دین کے لحاظ سے کاروباری حجم بدھ کی نسبت4 کروڑ85لاکھ 22ہزارشیئرززائدرہا۔گزشتہ روز ٹریڈنگ کا آغاز مثبت زون میں ہوا لیکن تھوڑی ہی دیر بعد سپریم کورٹ میں ایمنسٹی اسکیم چیلنج ہونے کی اطلاعات گردش کرنے لگیں جس کے باعث عمومی طور پرسرمایہ کاروں کی جانب سے حصص کی فروخت بڑھ گئی جب کہ آئندہ بجٹ میں فرٹیلائزر سیکٹر پر سبسڈی ختم ہونے کی اطلاعات کے باعث فرٹیلائزر سیکٹر میں بھی حصص کی فروخت کا دباؤ بڑھ گیا اور نتیجے کے طور پر مارکیٹ منفی زون میں داخل ہوگئی جب کہ ٹریڈنگ کے دوران ایک موقع پر انڈیکس 46219پوائنٹس کی نچلی سطح پر جا پہنچا اس دوران ریکوری بھی دیکھنے میں آئی اور انڈیکس 46584پوائنٹس کی بلند سطح پر بھی دیکھا گیا اسی طرح اتار چڑھاؤ کا سلسلہ دن بھر جاری رہا لیکن مجموعی طور پر مندی غالب رہی اور مارکیٹ کے اختتام پر کے ایس ای 100 انڈیکس154.79 پوائنٹس کی کمی سے46331.71ائنٹس پر بند ہوا اسی طرح کے ایس ای 30 انڈیکس86.06پوائنٹس کمی ہوئی اور23240.02 پوائنٹس پر کے ایم آئی30 انڈیکس24.10پوائنٹس کی کمی سے79230.08پوائنٹس اورکے ایس ای آل شیئرز انڈیکس 37.23پوائنٹس کی کمی سے 33224.37پوائنٹس ہو گئی ۔گزشتہ روز مجموعی طور پر400کمپنیوں کے حصص کا کاروبار ہوا جن میں سے161کمپنیوں کے حصص کے بھاؤ میں اضافہ219کمپنیوں کے حصص کے بھاؤ میں کمی جبکہ20کمپنیوں کے حصص کے بھاؤ میں استحکام رہا۔بیشتر کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں کمی آنے کے باعث مارکیٹ کی سرمایہ کاری مالیت میں19 ارب30 کروڑ35لاکھ روپے کی کمی ہوئی جس کے نتیجے میں سرمایہ کاری کی مجموعی مالیت 94کھرب99ارب98کروڑ76لاکھ روپے سے گھٹ کر94کھرب80ارب68کروڑ41لاکھ روپے ہو گئی ۔جمعرات کو33کروڑ29لاکھ 6ہزار شیئرز کا کاروبار ہوا جب کہ اس کے مقابلے میں بدھ کو 28کروڑ43لاکھ83ہزار شیئرز کا کاروبار ہوا تھا اس لحاظ سے گزشتہ روز حصص کی لین دین4 کروڑ85لاکھ 22ہزارشیئرززائدرہی۔

قیمتوں کے اتار چڑھاؤ کے لحاظ سے باٹا پاک کے حصص سرفہرست رہے جس کے حصص کی قیمت51.67 روپے اضافے سے2866.67 روپے اورپاک ٹوبیکو کے حصص کی قیمت45 روپے اضافے سے1900روپے ہو گئی ۔نمایاں کمی نیسلے پاکستان کے حصص میں ریکارڈ کی گئی جس کے حصص کی قیمت 339روپے کمی سے12511 روپے اورپاک سروسز کے حصص کی قیمت49.50روپے کمی سے940.50روپے ہو گئی ۔گزشتہ روزکے الیکٹرک کے حصص کی سرگرمیاں4کروڑ75لاکھ41ہزار شیئرز کے ساتھ سرفہرست رہی جب کہ اینگرو پولیمر،پی آئی اے سی،ایگری ٹیک لمیٹیڈ، لوٹی کیمکل ،دیوان سیمنٹ ،فوجی فوڈز،غنی آٹو موبائل ،آزگارڈ نائن اور سوئی سدرن گیس کے حصص کی بھی نمایاں لین دین ہوئی اسٹاک ماہرین کے مطابق آئندہ دنوں بھی مارکیٹ میں منفی رجحان جاری رہنے کا امکان ہے ۔

مزید : کامرس