فوڈ اتھارٹی نے پیکنگ میٹریل ریگولیشن 2018کا ڈرافٹ تیار کرلیا

فوڈ اتھارٹی نے پیکنگ میٹریل ریگولیشن 2018کا ڈرافٹ تیار کرلیا

ملتان(جنرل رپورٹر)اشیائے خورد و نوش کے قوانین کے بعد اب پیکنگ میٹریل بھی حفظان صحت کے اصولوں کے عین مطابق ہوگا ۔پنجاب فوڈ اتھارٹی نے پیکیجنگ میٹریل ریگولیشن (بقیہ نمبر44صفحہ12پر )

2018کا ڈرافٹ تیار کر لیا ہے ۔سائینٹیفک پینل کی منظوری کے بعد مکمل قانون پنجاب فوڈ اتھارٹی بورڈ کے اجلاس میں منظوری کے لئے پیش کیز جائیگا ۔پنجاب پیور فوڈ ریگولیشن 2017ء کے تحت اشیاء خورد و نوش کی پیکنگ کے لئے قانون لانے کی تیاری مکمل کر لی گئی ہے ۔اشیاء خورد ونوش کے قوانین کے بعد اب پیکیجنگ میٹیرل 2018 کے تحت پیکنگ میٹیرل کو بھی حفظان صحت کے اصولوں کے عین مطابق کیا جائے گا ۔اس نئے قانون کے مطابق خوراک کی پیکنگ میں ایک تہہ والے فوم نما میٹیرل سے بنے کپ اور پلیٹ پر پابندی عائد کر دی جائے گی ۔اس کے علاوہ کھانے پینے کی اشیاء کی اخبار اور ردی میں پیکنگ پر بھی اسے قانونی طور پر جرم قرار دیا گیا ہے ۔نئے ریگولیشن کے مطابق فوم نما پلیٹ اور کپ کا تین تہوں پر مشتمل ہونا ضروری ہے ،پلاسٹک میٹیرل سمیت تمام استعمال ہونیوالے میٹیریل میں سیاہی بھی غیر جذب پذیر ہونا لازم قرار دیا گیا ہے۔پینے کے پانی کی 19لیٹر بوتل کو چالیس بار استعمال کے بعد ری سائیکل کرنا لازم ہوگا ۔فوڈ اتھارٹی نے ری سائیکلنگ اور پیکیجنگ پر سزا اور جرمانہ پر سفارشات تیا رکر لی ہیں ۔

مزید : ملتان صفحہ آخر