بیساکھی میلے میں شرکت کیلئے 2030سکھ یاتری لاہور پہنچ گئے

بیساکھی میلے میں شرکت کیلئے 2030سکھ یاتری لاہور پہنچ گئے

لاہور (آن لائن) بیساکھی میلے کی تقریبات میں شرکت کرنے کے ساتھ ساتھ مذہبی رسومات کی ادائیگی کیلئے بھارت سے 2030سکھ یاتری پاکستان پہنچ گئے ان سکھ یاتریوں کو تین سکھ سپیشل ٹرینوں کے ذریعے بھارت سے براستہ اٹاری پاکستان لایاگیا ۔ بھارت سے پاکستان آنے والے سکھ سپیشل ٹرین کے ذریعے 850 سکھ یاتری پاکستان پہنچے تو واہگہ ریلوے سٹیشن پر پاکستان گوردوارہ پربندھک کمیٹی کے عہدیداروں سمیت سیکرٹری متروکہ وقف املاک بورڈ اور دیگر اعلیٰ حکام نے مہمان سکھ یاتریوں کا استقبال کیا۔ سکھ یاتریوں کے گروپ لیڈر سردار گرومیت سنگھ کی سربراہی میں آنے والے سکھ یاتریوں جن میں خواتین و بزرگوں اور بچوں کی کثیر تعداد شامل تھی کی واہگہ ریلوے سٹیشن پر مشروبات چائے سے تواضع کی گئی پہلی سکھ سپیشل جیسے ہی واہگہ ریلوے سٹیشن پہنچی تو واہگہ ریلوے سٹیشن کی فضاء سکھوں کے مذہبی نعروں سے گونج اٹھی واہگہ ریلوے سٹیشن پر سکھ یاتریوں کے امیگریشن اور کسٹمزکا عمل مکمل کرنے کے بعد ان سکھ یاتریوں کو سکھ سپیشل ٹرینوں کے ذریعے حسن ابدال روانہ کر دیاگیا ،اس موقع پر سیکورٹی کے سخت انتظامات کئے گئے تھے،سردار گرومیت سنگھ نے واہگہ ریلوے سٹیشن پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان آکر ہمیں ہمیشہ بہت پیار ملا پاکستان سکھوں کیلئے محفوظ ملک ہے۔پوری دنیا میں پاکستان واحد ملک ہے جس نے سکھ میرج ایکٹ منظور کیا جو سکھوں کیلئے ایک اعزاز ہے۔ واضح رہے بھارت میں متعین پاکستانی سفارتخانے نے 2030 سکھ یاتریوں کو ویزے جاری کئے جبکہ پاکستانی حکومت نے سفارتخانے کو تین ہزار سکھ یاتریوں کو ویزہ جاری کرنے کی ہدایات دے رکھی تھیں۔

مزید : صفحہ آخر