حکومت نے نیب کے آرڈیننس میں تبدیلی کا حتمی فیصلہ کر لیا : مسودہ تیار

حکومت نے نیب کے آرڈیننس میں تبدیلی کا حتمی فیصلہ کر لیا : مسودہ تیار

  

لاہور(خبرنگار) وفاقی حکومت نے قومی احتساب بیورو (نیب) کے آرڈیننس میں تبدیلی کا حتمی فیصلہ کر لیا اور اس حوالے سے مسودہ تیار کرلیا گیا،اس میں نیب کا دائرہ اختیار صرف وفاق تک رہ جائے گا۔ ذرائع نے بتایا ہے کہ موجودہ حکومت نے نیب کے اختیارات محدود کر نے کے لئے پلان کو حتمی شکل دے دی ہے اور اس حوالے سے باقاعدہ مسودہ بھی تیار کر لیا ہے جس کے بعد نیب کا دائرہ کار صرف وفاق تک محدود رہ جائے گا اور اس میں نیب صوبوں کے خلاف کارروائی نہیں کر سکے گا۔ اور نیب سیاستدانوں سمیت کسی بھی بڑے مگر مچھ کو گرفتار نہیں کر سکے گا۔ اور گرفتاری کے حوالے سے چیئرمین نیب سے اختیارات واپس لے لیے جائیں گے۔ نئے قانون کے تحت چیئرمین نیب وارنٹ گرفتاری نہیں جاری کر سکے گا اور نہ ہی چیئرمین نیب کے حکم پر کسی کرپٹ شخص کو گرفتار کیا جاسکے گا۔ ملزمان کی گرفتاری کے حوالے سے اختیارات صرف احتساب عدالت کے پاس ہوں گے۔قانونی ماہرین کا کہنا ہے کہ نیب کے آرڈیننس 1999میں تبدیلی کے بعد نیب عملی طور پرایک طرح سے ختم ہو کررہ جائے گااور اس سے کرپٹ لوگوں سمیت بڑے بڑے مگر مچھ بچ جانے میں کامیاب ہو جائیں گے اور ملک میں کرپشن کے خلاف احتساب کا عمل ختم ہو کررہ جائے گا۔

مزید :

صفحہ اول -