بہاولپور صوبہ کا نعرہ جنوبی پنجاب کی آواز دبانے کیلئے لگایا گیا:شاہ محمود قریشی

بہاولپور صوبہ کا نعرہ جنوبی پنجاب کی آواز دبانے کیلئے لگایا گیا:شاہ محمود ...

  

ملتان ( نیوز رپورٹر ) پاکستان تحریک انصاف کے وائس چیئرمین مخدوم شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ ساڑھے تین کروڑ آبادی پر مبنی جنوب پنجاب کی محرومیوں اور پسماندگی کے خاتمہ کے لیے پیپلز پارٹی کا کردار صرف قراردادوں تک محدود رہا ہے جبکہ (ن) لیگ کی حکومت نے جنوبی پنجاب صوبہ کی آواز دبانے کے لیے خطے کی اس آواز کو بہاولپور صوبہ کا نعرہ لگا کر تقسیم کرنے کی کوشش کی ہے جبکہ تحریک انصاف کی سنٹرل ایگزیکٹو باڈی نے جنوبی پنجاب صوبہ کے قیام پر مکمل اتفاق کیا ہے جبکہ مسلم لیگ صرف مگرمچھ کے آنسو بہا نے اور خطے کی تقسیم کرنے کی کوشش کرتی رہی ہے ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز سجادہ نشین موسیٰ پاک شہید سید وجاہت حسین گیلانی کی عیادت کے بعد نشتر ہسپتال کے باہر میڈیا نمائندگان سے گفتگو کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ پیر آف پگاڑہ نے بھی جنوبی پنجاب صوبہ کے قیام پر تحریک انصاف کے موقف کی حمایت کی ہے جبکہ وزیراعلیٰ بلوچستان عبدالقدس بزنجو نے بھی ایک ملاقات میں بلوچستان کی مکمل حمایت کا اعلان کیا ہے انہوں نے کہا کہ صوبہ محاذ کے چیئرمین بلخ شیر مزاری اور صدر خسرو بختیار سے 15اپریل کو لاہور میں ملاقات طے ہے اس ملاقات میں تحریک انصاف کی جانب سے جنوبی پنجاب صوبہ کے قیام بارے اپنا موقف پیش کیا جائیگا ان کی بات میں وزن ہے اور ہم نے مل کر چلنے کا فیصلہ کرنا ہے ۔ مخدوم شاہ محمود قریشی نے کہا کہ آئندہ بجٹ بارے سپیکر کے کمرے میں پارلیمانی نمائندہ کا اجلاس ہوا ہے تحریک انصاف کا موقف ہے کہ حکومت اپنے پانچ سالہ دور میں پانچ بجٹ پیش کرچکی ہے اپنے دور میں چھ بجٹ نہیں دے سکتی تاہم آئین میں اس بات کی گنجائش ہے کہ وہ پورے سال کا بجٹ دینے کی بجائے چار ماہ کی بجٹ پیش کرسکتی ہے جس کی تمام پارلیمانی نمائندوں نے تائید کی ہے انہوں نے کہا کہ علی جہانگیر صدیقی کو حکومت کی جانب سے واشنگٹن میں سفیر نامزد کیا گیا ہے جو باعث حیرت ہے ایک ایسے وقت میں جب امریکہ سے تعلقات انتہائی کشیدہ اور سیریا میں موجودہ صورتحال امریکہ اور روس کے درماین کشید گی کے موقع پر ایک ناتجربہ کار جسے سفارتی امور بارے رتی بھر آگاہی نہیں اس ضمن میں حکومتی فیصلہ انتہائی نقصان دہ ثابت ہوسکتا ہے انہوں نے کہا کہ بھارت اس وقت نہتے کشمیریوں پر بریریت کی انتہائی کیے ہوئے ہے ایسے حالات میں پاکستان کو ایک تجربہ کار سفارت خار کی ضرورت ہے جو واشنگٹن میں بھارتی جارحیت کا مقدمہ احسن طریقہ سے آگے بڑھا سکے مخدوم شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ تحریک انصاف 29اپریل کو مینار پاکستان پر ایک تاریخی جلسہ کرنے جارہی ہے اور ہر پاکستانی کو دعوت ہے کہ وہ اس جلسہ میں ضرور شریک ہو جس میں ملک لوٹنے والوں کے احتساب اور بلاتفریق احتساب کا پیغام قوم کو دیا جائے گا عمران خان29اپریل کو مینار پاکستان جلسہ میں پوری قوم کو اپنا پروگرام دیں کہ اقتدار میں آکر تحریک انصاف اداروں کی مضبوطی واستحکام کے لیے کیا اقدامات کریگی انہوں نے کہا کہ حکومت گڈ گورننس فراہم کرنے میں مکمل طور پر ناکام ہوگئی ہے جس کے باعث سپریم کورٹ آف پاکستان کو مجبوراً عوام کو سہارا دینا پڑ رہا ہے انہوں نے کہا کہ چیف جسٹس آف پاکستان کو سلام پیش کرتا ہوں کہ انہوں ںے گنے کے کاشتکاروں کو تباہ ہونے سے بچالیا ہے حکومتی اعلان کے باوجود کاشتکاروں سے 180روپے کی بجائے120روپے فی من خریداری کی جارہی تھی اور حکومت خاموش تماشائی بنی ہوئی تھی ایک سوال پر انہوں نے کہا کہ آج نگران وزیراعظم بارے خورشید شاہ سے بات چیت ہوتی ہے انہوں نے کہا کہ وزیراعظم اپنے حلیفوں سے بات چیت کرکے آگاہ کریں گے انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف کا ایک ہی مقصد ہے کہ نگران وزیراعظم کا ایک نقاطی ایجنڈہ ہوکہ فری اور شفاف انتخابات کرائے جائیں اور ایسی نگران حکومت ہو جو اس کی اہلیت بھی رکھتی ہو ہم پاک فوج سے بھی اپیل کریں گے کہ الیکشن کے موقع پر اندر باہر تعیناتی سے شفاف انتخابات کو یقینی بنایا جائے تحریک انصاف اقتدار میں آکر پہلے سو دن کے اندر بہت سے اصلاحات لائے گی ۔

شاہ محمود قریشی

مزید :

کراچی صفحہ اول -