چارسدہ میں تعلیمی جائنٹ ایکشن کمیٹی کا مطالبات کے حل کیلئے احتجاجی مظاہرہ

چارسدہ میں تعلیمی جائنٹ ایکشن کمیٹی کا مطالبات کے حل کیلئے احتجاجی مظاہرہ

چارسدہ (بیورو رپورٹ) چارسدہ میں ناقص تعلیمی نظام و ناقص حکومتی پالیسی اور غیر ملکی این جی اوز کی تعلیمی اداروں میں عمل دخل کے خلاف تعلیمی جائنٹ ایکشن کمیٹی کا فاروق اعظم چوک اور چارسدہ پریس کلب کے سامنے احتجاجی مظاہرہ و دھرنا ۔ موجودہ صوبائی حکومت نے ہر وقت تعلیم سے وابستہ تمام افراد و مکاتب فکر سے وعدہ خلافی کی ہے اور آئے د ن تعلیم دشمن پالیسیوں عمل پیرا ہے۔ صوبائی حکومت تعلیم کو غیر ملکی این جی او ز کو حوالہ کرنے کیلئے نت نئے ہتھکنڈے استعمال کر رہے ہیں۔ چےئرمین میاں ساجد ۔ تفصیلات کے مطابق ناقص تعلیمی نظام و ناقص حکومتی پالیسی اور غیر ملکی این جی اوز کی تعلیمی اداروں میں عمل دخل کے خلاف تعلیمی جائنٹ ایکشن کمیٹی کا فاروق اعظم چوک اور چارسدہ پریس کلب کے سامنے احتجاجی مظاہرہ و دھرنا کیا گیا ۔ احتجاجی مظاہرے میں آل ٹیچر ز ایسو سی ایشن ، کالج لیکچرار ، پروفیسرز ایسوسی ایشن ، ایس ایس ٹی ایسو سی ایشن ، سرکاری سکولز کے پرنسپلزایسو سی ایشن نے شرکت کی ۔ احتجاجی مظاہرے سے خطاب کر تے ہوئے ایکشن کمیٹی کے چےئرمین میاں ساجد ، سابقہ چےئرمین ناصر خان ، پرائیوٹ ایجوکیشن نیٹ ورک کے نفیس اللہ ، طاہر امین ، میاں منظور شاہ اور مولانا رحم دین نے کہا کہ صوبائی حکومت نے ہر وقت تعلیم سے وابستہ تمام افراد و مکاتب فکر سے وعدہ خلافی کی ہے اور آئے دن تعلیم دشمن پالسیوں پر عمل پیرا ہیں ۔ مقررین نے کہاکہ صوبائی حکومت تعلیم کو غیر ملکی این جی اوز کو حوالہ کرنے کیلئے نت نئے ہتھکنڈ ے استعمال کر رہے ہیں جن کا زندہ ثبوت آئی ایم یواور ڈی ایف آئی ڈی کے ذریعے تعلیمی نصاب میں غیر اسلامی و غیر شرعی موآد کو شامل کر رہا ہے ۔ مقررین نے کہا کہ صوبائی حکومت پہلی ہی فرصت میں گورنمنٹ ٹیچر ز ، پروفیسرز ، لیکچررز ، تعلیمی بورڈ کے اہلکاروں اور پرائیوٹ سکول منیجمنٹ کے مطالبات کو جلد از جلد منظور کرائیں اور ان کی بے چینی دور کرائیں بصورت دیگر جائنٹ ایکشن کمیٹی ضلع چارسدہ اپنے مطالبات منوانے کیلئے بہت جلد بنی گالہ کا رخ کرے گی جس کی تمام تر ذمہ داری موجودہ نااہل صوبائی حکومت پر ہو گی ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر