کوہاٹ ،ڈپٹی کمشنر کے ہیڈ کوارٹر ہسپتال اور مرکز صحت پر چھاپے

کوہاٹ ،ڈپٹی کمشنر کے ہیڈ کوارٹر ہسپتال اور مرکز صحت پر چھاپے

کوہاٹ (بیورورپورٹ)ڈپٹی کمشنر کوہاٹ خالد الیاس نے ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال کے ڈی اے کوہاٹ اور دیہی مرکز صحت استرزئی پر اچانک چھاپے مارے اس دوران ڈیوٹی سے غیر حاضر 2ڈاکٹروں کو فوری طور پر معطل کرکے ان کی تنخواہوں سے 10دن کی کٹوتی کا حکم دیا۔تفصیلات کے مطابق ڈپٹی کمشنر کوہاٹ نے اتوار کے دن ڈسٹرکٹ ہیڈکوارٹر ہسپتال کے ڈی اے پر اچانک چھاپہ مارااس دوران کیجولٹی میں ڈیوٹی سے غائب ڈاکٹر کو فوری طورپر معطل کرکے ان کی تنخواہ سے 10دن کی کٹوتی کے احکامات جاری کئے۔ڈپٹی کمشنر نے دورے میں ہسپتال کے4میں سے 2ڈائلاسس مشینوں کو خراب پایاجبکہ آئی سی یو بھی غیر فعال تھاجس کا نوٹس لیتے ہوئے انہوں نے متعلقہ حکام کو معاملہ فوری طورپر صوبائی حکومت کے ساتھ اٹھانے کی ہدایت کی۔ اسی طرح انہوں نے ہسپتال کی صفائی کی صورتحال کو غیر اطمینان بخش قراردیتے ہوئے اسے بلا تاخیر بہتر کرنے کا حکم دیا۔خالد الیاس نے ہسپتال میں افرادی قوت کی کمی کا مسئلہ حل کرنے کے لئے متعلقہ فورم سے رجوع کرنے اور عوام کے پرزور مطالبے پر مریضوں کے لواحقین کے لئے ٹائلٹ بلاکس تعمیر کرنے کی بھی ہدایت کی۔دریں اثناء ڈپٹی کمشنرخالدالیاس نے اتوار کی رات 11 بجے دیہی مرکز صحت استرزئی پر اچانک چھاپے کے دوران ڈاکٹر کاشف کو غیر حاضر پایا جس پر انہیں معطل کرکے ان کی تنخواہ سے 10دن کی کٹوتی کی ہدایت کی جبکہ ڈینٹل سرجن کی آسامی پُر کرنے کے لئے ڈی ایچ او کو احکامات دئیے۔انہوں نے مذکورہ مرکز صحت کے مختلف وارڈز، سٹورز اور ریکارڈ چیک کیا اور عملے کی جانب سے ان کے نوٹس میں لانے والے جملہ مسائل کا ترجیحی بنیادوں پر حل کرنے کا یقین دلایا۔

مزید : پشاورصفحہ آخر