مہمند ایجنسی، آل ٹیچرز ایسوسی ایشن مہمندکا سروس ایکٹ کیخلاف احتجاجی مظاہرہ

مہمند ایجنسی، آل ٹیچرز ایسوسی ایشن مہمندکا سروس ایکٹ کیخلاف احتجاجی مظاہرہ

مہمند ایجنسی (نمائندہ پاکستان) مہمند ایجنسی، آل ٹیچرز ایسوسی ایشن مہمندکا سروس ایکٹ 2018 ء کے خلاف احتجاجی مظاہرہ۔ ٹائم سکیل بمعہ سروس سٹرکچر دیا جائے۔ صوبائی حکومت جھوٹ اور دوغلے پن سے کام لے رہی ہے۔ اساتذہ اپنے جائز حق کے حصول کیلئے جدوجہد جاری رکھے گا۔ مطالبات منظور نہ ہونے کی صورت میں بنی گالا میں دھرنا دیا جائیگا۔ ان خیالات کا اظہار صدر آل ٹیچر ز ایسوسی ایشن مہمند ایجنسی کے صدر مرجان علی مہمند نے غلنئی پریس کلب کے سامنے اساتذہ کے احتجاجی مظاہرے کے دوران کیا۔ مظاہرے میں اساتذہ نے کثیر تعداد میں شرکت کی۔ مظاہرے کے دوران پشاور ٹو باجوڑ شاہراہ ہر قسم ٹریفک کیلئے بند رکھا گیا۔ صدر مرجان علی مہمند نے مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ آج صوبہ خیبر پختونخواہ سمیت پورے فاٹا میں اساتذہ ظالمانہ سروس ایکٹ 2018 ء کے خلاف احتجاجی ریکارڈ کرینگے۔ اس سلسلے میں آل فاٹا ٹیچرز ایسوسی ایشن کے مرکزی صدر حاجی خان مالک محسود کی ہدایت پر مہمند ایجنسی میں بھی احتجاجی مظاہرہ کیا جا رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اگر اساتذہ کو ٹائم سکیل دیا گیا اور سروس سٹرکچر واپس لے لیا جائے تو اس سے اساتذہ ترقی سے محروم ہو جائینگے۔ ہمارا پر امن جدوجہد اُس وقت تک جاری رہیگا جب تک ہمیں غیر مشروط ٹائم سکیل بمعہ سروس سٹرکچر نہیں دیا جائیگا۔ صوبائی حکومت جھوٹ اور دوغلے پن سے کام لے رہا ہے اور اپنے وعدوں سے منحرف ہو رہا ہے۔ ہمارے ساتھ کئے گئے وعدے ایفاء کئے جائے۔ بصورت دیگر فاٹا اساتذہ ایک بار پھر احتجاجی سلسلہ شروع کرینگے۔ اور اپنا جائز حق ٹائم سکیل بمعہ سروس سٹرکچر دینے تک بنی گالا میں دھرنا دینگے۔

Back

مزید : پشاورصفحہ آخر