یار حسین میں بائیک رف استعمال کرنیوالوں کیخلاف مہم کا آغاز

یار حسین میں بائیک رف استعمال کرنیوالوں کیخلاف مہم کا آغاز

  

یارحسین(نمائندہ پاکستان)نوتعینات ایس ایچ او تھانہ تورڈھیرنیازگل خان نے کہا ہے کہ آج جمعہ کے روزسے ٹریفک قوانین کی خلاف ورزی کرتے ہوئے بائیک رف استعمال کرنے والوں کے خلاف مہم کاآغاہوگاکمسن ڈرائیورز،بائیک پر ون وھیلنگ یا اورکوئی کرتب دکھانے والے اوباش نوجوان موت بانٹنے لگے ہیں رکشوں کے استعمال کیلئے رجسٹریشن ،ڈرائیونگ لائسنس،روٹ پرمٹ ،پاسنگ پرمٹ،اوربس سٹاپ پر کھڑارہنے کیلئے علیحدہ پارکنگ اڈہ ضروری ہوتاہے نوجوانوں کے والدین ، منتخب بلدیاتی اور میڈیانمائندوں سے بھرپورتعاون کی درخواست ہے وہ جمعرات کے روزسینئرصحافی ظفراقبال سائل سے ایک ملاقات میں گفتگوکررہے تھے انکاکہنا تھا کہ رکشوں اوربائیکس کے ٹریفک حادثات میں تشویشناک حد تک اضافہ کے پیش نظر ناگزیرروک تھام کیلئے ڈی پی او صوابی سہیل خالد نے خصوصی ہدایات جاری کردی ہیں جسکے تحت آج جمعہ کے روز سے ضلع بھرمیں ٹریفک قوانین کی خلاف ورزی کرنے والے موٹرسائیکل سواروں اوررکشوں کے خلاف مہم شروع ہورہا ہے اس ضمن میں والدین کو بھی خبردار کیا گیا ہے کہ اٹھارہ سال سے کم عمر بچوں کو بائیک چلانے نہ دیا جائے اورجو بچے بائیک پر ون وھیلنگ یا دیگر کرتب دکھاتا ہوا اسکاغلط استعمال کررہا ہوتا ہے اُنہیں ایسا کرنے سے روکھے رکھیں جس سے انکی اپنی جان بھی اوربسااوقات بے گناہ راہگیروں کو بھی موت کے منہ پہنچایا جاتا ہے انہوں نے منتخب بلدیاتی نمائندوں سے بھی اپیل کی ہے کہ ایسے اوباش نوجوانوں کے خلاف پولیس کاروائی کے نتیجہ میں سفارش سے گریز کیا جائے انکا یہ بھی کہنا تھا کہ رکشوں پر اُورلوسواریاں بٹھاکرلے جانابرداشت نہیں کیا جائیگا جبکہ بغیررجسٹریشن، بغیر ڈرائیونگ لائسنس وروٹ پرمٹ کے چلانے والے رکشوں کے خلاف بھی کاروائی ہوگی کسی بھی بس سٹاپ پرسواریوں کے انتظار میں ایک سے زائد متوازی کھڑے رکشے ٹریفک کی روانی میں خلل ڈالنے کے مؤجب اورحادثات کا پیش خیمہ بنتے ہیں جسکے خلاف پولیس کاروائی ناگزیرہے اس موقع پر تورڈھیراڈہ سے بائیک چوری ہونے کے حوالے سے انکا کہنا تھا کہ بائیک لفٹر ضرورقانون کے شکنجے میں آئیگا تاہم کچھ ذمہ داری ان شہریوں پر بھی پڑتی ہے جسے لوگ نبھانے میں غفلت کامظاہرہ کررہے ہیں مین روڈ کے کنارے بائیک اَن لاک کھڑا کرکے چابی بھی اسمیں چھوڑ دیناخودچوروں کو دعوت جرم دینے کے مترادف ہے اگر ہینڈل لاک کرکے کھڑا کردیتے تو چورلاک کھولنے میں کچھ تووقت لیتا ہوسکتا ہے اس دوران دکاندار باہر نکل جاتا یاپاس پڑوسی کی نظر چورپر پڑتی اوریوں واقعہ وقوع پذیر ہی نہ ہوتا ۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -