اے سی سی اے کا ’’پائیدار مستقبل کی جانب راستے‘‘ کے عنوان پر ڈائیلاگ

اے سی سی اے کا ’’پائیدار مستقبل کی جانب راستے‘‘ کے عنوان پر ڈائیلاگ

  

کراچی(پ ر) ایسوسی ایشن آف چارٹرڈ سرٹیفائیڈ اکاؤنٹنٹس (اے سی سی اے) نے ’’پائیدار مستقبل کی جانب راستے‘‘ کے عنوان پر ملٹی سٹیک ہولڈر لیڈر شپ و گورننس ڈائیلاگ کی میزبانی کی۔ یہ ڈائیلاگ اے سی سی اے آفس میں منعقد ہوا جس میں بے مثال تعاون کی کوششوں میں کاروبار، سول سوسائٹی، حکومت، اکیڈمیا اور قومی و بین الاقوامی ترقیاتی اداروں سے سینئر نمائندے شامل تھے۔ اس موقع پر عارف مسعود مرزا، ہیڈ آف پالیسی، MENASA نے خطبہ استقبالیہ پیش کیا اور متعدد سطحوں پر اکاؤنٹینسی کے پیشہ کو مشغول کرنے کے لئے پائیدار ترقیاتی اہداف (ایس ڈی جیز) کی فراہمی کیلئے حکمت عملیوں کے نفاذ کی جانب کوششوں کے بارے میں گفتگو کی۔ انہوں نے اے سی سی اے کی تحقیقی رپورٹ ’’پائیدار ترقیاتی اہداف : سیاق و سباق کی نئی تعریف، خطرات اور مواقع‘‘ کے مندرجات پر روشنی ڈالی اور کہا کہ فزیکل و ادارہ جاتی انفراسٹرکچر کی تعمیر کے لئے سرمایہ کاری پائیدار ترقیاتی اہداف (ایس ڈی جیز) کے گرد کاروبار، فنانس اور حکومتی سرگرمیوں کا تعین کرے گی جسے مضبوط تکنیکی مہارت اور اخلاقیات پر مبنی فیصلوں کی ضرورت ہوگی اور دنیا بھر میں اکاؤنٹینسی کا پیشہ یہ فراہم کرنے کیلئے بہترین جگہ ہے۔ بی سی ایس ڈی۔ پاکستان کے صدر امجد پرویز جنجوعہ نے ہم آہنگی کی تشکیل کی اہمیت کے بارے میں گفتگو کی کیونکہ اس ہدف کا حصول واحد ہستی کی پہنچ سے آگے ہے۔ انہوں نے ’’پائیدار ترقیاتی اہداف کی فراہمی کے لئے کلیدی تعاون‘‘ پر روشنی ڈالی۔ انہوں نے کہا کہ یہاں نجی شعبہ اور حکومت کی جانب سے پروفیشنلز کے درمیان گہرے رابطے کی ضرورت ہے۔ لہذا اداروں کے لئے پائیدار ترقی میں مشترکہ مفاد کے تبادلہ کا موقع ہے کہ وہ ایک فرق قائم کرنے کیلئے اپنے وسائل کو تقویت دیں۔ انہوں نے کہا کہ بی سی ایس ڈی ۔ پاکستان فیوچر لیڈرز ٹیم (ایف ایل ٹی) پروگرام قائم کر رہی ہے جو مستقبل کے لئے پائیدار لیڈرز کو فروغ دینے کیلئے منفرد پیشہ ورانہ ترقیاتی موقع ہے۔ اس پروگرام کا مقصد متحرک کاروباری رہنماؤں کا ایک نیٹ ورک تشکیل دینا ہے جو ان کی کمپنیوں اور معاشرہ دونوں میں پائیدار ترقیاتی سفیروں کی حیثیت سے کردار ادا کرنے میں کامیاب ہو سکتا ہے۔ فورم میں اسباق کے تبادلہ کی اہمیت و ضرورت، بہترین طریقوں اور نئے اسٹریٹجک موضوعات اور اقدامات کی تلاش کی ضرورت اور اہمیت پر زور دیا گیا۔ چیئرمین بورڈ آف گورنرز، NUR انٹرنیشنل یونیورسٹی ڈاکٹر ظفر اقبال قریشی نے اپنے اختتامی ریمارکس میں پائیدار ترقیاتی اہداف کو فروغ دینے کے لئے مسابقتی اور موثر کارکردگی کے حصول کیلئے ادارہ جاتی صلاحیتوں کو فروغ اور ہم آہنگی کی تعمیر کی ضرورت پر بات کی۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -