سرجانی ٹاؤن کے مکینوں کا قبضہ اور لینڈ مافیا کے خلاف احتجاج

سرجانی ٹاؤن کے مکینوں کا قبضہ اور لینڈ مافیا کے خلاف احتجاج

کراچی( کرائم رپورٹر) سرجانی ٹاؤن کے مکینوں نے گلشن سرجانی میں لینڈ مافیا اور قبضہ مافیا کے خلاف احتجاج کیا اور اعلیٰ حکام سے مطالبہ کیا کہ علاقے کو جرائم پیشہ عناصر سے پاک کیا جائے ۔ تفصیلات کے مطابق سرجانی ٹاؤن کے علاقے گلشن سرجانی میں گزشتہ 11 سال سے لینڈ مافیا اور قبضہ مافیا کا راج ہے۔ ایک فائل کئی افراد کو فروخت کی جاتی ہے۔ کبھی NOC کے نام پر روپے بٹورے جارے ہیں تو کبھی بنیادی سہولیات مثلاً بجلی، گیس، پانی اور سیوریج کے جان پر کروڑوں روپے لیے جاتے ہیں جس سے علاقہ مکین مستقل دشواریوں کا شکار ہیں۔ ہر چار، چھ ماہ بعد کسی نہ کسی کو علاقے کا ذمہ دار اور بلڈر کا روپ دے کر لایا جاتا ہے کہ یہ شخص علاقے کے مسائل اور کاغذات کی درستگی میں تعاون کرے گا مگر وہ بھی عوام کا کروڑوں روپیہ خورد برد کرکے غائب ہوجاتا ہے ۔ذرائع کے مطابق مرزا مقصود بونا نامی شخص اور اس کے کارندے علی بادشاہ، عابد ڈار ، فضل ربی اور دیگر افراد بلڈر بنے ہوئے ہیں اور کروڑوں کاغبن کرچکے ہیں۔ مرزا مقصود بونا اور اس کے ساتھی عوام کو دونوں ہاتھوں سے لوٹ رہے ہیں اسلحہ کے زور پر گارڈوں کے ساتھ گھروں کے تالے توڑ کر قبضہ کرلیتے ہیں۔ گلشن سرجانی کے مکین آج بھی بنیادی سہولتوں سے محروم ہیں۔ آج بھی وہاں گیس، بجلی، پانی اور سیوریج کا کوئی نظام نہیں ہے۔ تمام حکام بالا سے عرض ہے کہ گلشن سرجانی کی عوام کو ان درندوں سے نجات دلوائی جائے۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر