”نواز شریف کو اپنی ہی غلطی کی بڑا سزا مل گئی “،آرٹیکل 62ون ایف کے فیصلے کے بعد حامد میر نے ایسا انکشاف کردیا کہ جان کر آپ بھی چکرا جائیں گے

”نواز شریف کو اپنی ہی غلطی کی بڑا سزا مل گئی “،آرٹیکل 62ون ایف کے فیصلے کے بعد ...
”نواز شریف کو اپنی ہی غلطی کی بڑا سزا مل گئی “،آرٹیکل 62ون ایف کے فیصلے کے بعد حامد میر نے ایسا انکشاف کردیا کہ جان کر آپ بھی چکرا جائیں گے

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن )سپریم کورٹ نے آرٹیکل 62ون ایف کے تحت سزا یافتہ اراکین اسمبلی کو تاحیات نا اہل قرار دے دیا ہے ۔اس حوالے سے رد عمل دیتے ہوئے حامد میر نے کہا کہ میں نے آرٹیکل 62ون ایف کے تحت نا اہلی کی ہمیشہ مخالفت کی، میں اس کو درست نہیں سمجھتا کیونکہ کوئی بھی انسان صادق اور امین کے اس معیار پر پورا نہیں اترسکتا ۔

حامد میر نے انکشاف کیا کہ رضا ربانی نے مجھ سے درخواست کی کہ نواز شریف کو جا کر منائیں کہ اس شق کو آئین سے نکال دیا جائے ،جب میں نے نواز شریف کو جا کر کہا کہ یہ شق ایک تلوار کی طرح ہے جو کل کو آپ کے خلاف بھی چل سکتی ہے تو ان کا خیال تھا کہ ضیا ءالحق کی ترمیم کو آئین سے نکال دیا تو فوج نا راض ہو جائے گی ،اس ملاقات کے دوران نواز شریف نے آخر میں کہا کہ اعجاز الحق ناراض ہو جائیں گے ۔

حامد میر نے کہا کہ احتساب کا قانون نواز شریف لے کر آئے اور انہوں نے سیف الرحمان کو احتساب بیورو کا چیئر مین لگا کر سیاسی مخالفین کو ٹارگٹ کیا ۔انہوں نے مزید کہا کہ سپریم کورٹ کے اس فیصلے کے بعد نواز شریف کے بیانیے میں مزید شدت آجائے گی لیکن نواز شریف کو اپنے بیانیے کی کامیابی کے لیے پہلے اپنی کنفوژن دور کرنی ہو گی ،ایک طرف وہ اداروں کے خلاف بیان بازی نہ کرنے والوں کو ایجنٹ کہتے ہیں دوسری طرف آرمی چیف کی تعریف کرنے والے اپنے بھائی کو پارٹی کا صدر بنا دیتے ہیں ۔

مزید : قومی