سندھ حکومت کو ٹڈی دل خاتمے کیلئے وفاق کافضائی سپرے نہ کرنے پر تشویش

سندھ حکومت کو ٹڈی دل خاتمے کیلئے وفاق کافضائی سپرے نہ کرنے پر تشویش

  

کراچی(این این آئی)سندھ حکومت نے ٹڈی دل کے خاتمے لئے وفاق کی جانب سے فضائی سپرے نہ کرنے پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ ٹڈی دل بھی کرونا کی طرح خطرناک ہے وفاق صورتحال کو سمجھے. صوبائی وزیر زراعت محمد اسماعیل راہو نے مزید کہا کہ ضلعہ گھوٹکی میں ٹڈی دل آچکا ہے,لیکن وفاق کی جانب سے فضائی سپرے شروع نہ ہوسکا, سندھ کا پورا ریگستانی علاقہ ٹڈی دل کی لپیٹ میں ہے. انہوں نے کہا کہ لاکھوں ایکڑ کے رقبے میں ٹڈی دل کے بچے اور انڈے موجود ہیں,پاکستان کو کرونا وائرس کے ساتھ ساتھ ٹڈی دل کا بھی سامنہ کرنا پڑیگا. وزیرزراعت نے کہا کہ ٹڈی دل کا خاتمہ فضائی اسپرے سے ہی ممکن ہے, ڈیزرٹ لوکسٹ اور فضائی سپرے فقط وفاقی حکومت کا مینڈیٹ ہے, منسٹری آف فوڈ سکیور ٹی نے وزیراعظم کی موجودگی میں وعدہ کیاتھا جووفا نہ ہوا,6 مارچ کے اجلاس میں اعلان کیا گیا کہ اپریل کے پہلے ہفتے میں فضائی اسپرے شروع ہو چکا ہوگا. انہوں نے کہاکہ سب سے پہلے بلوچستان اور سندھ میں اسپرے ہونا تھا, ٹڈی دل مکئی اور کپاس سمیت غذائی اجناس کی فصلو ں پرحملہ آور ہوگی, ناقابل تلافی نقصان ہوسکتا ہے, سندھ میں بارشوں کی وجہ سے ٹڈی دل کے لئے موسم سازگارہوگا, وفاق کی لاپرواہی کی وجہ سے گزشتہ سال بھی فصلوں کونقصان پہنچا تھا, محکمہ پلانٹ پرو ٹیکشن اگر کام نہیں کرسکتا تو اسے بند کر دیا جائے. صوبائی وزیر نے کہا کہ پلانٹ پروٹیکشن کی چند پرانی گاڑیاں کچھ نہیں کرسکتی, ٹڈی دل کے ممکنہ تباہ کاری کو نظرانداز نہیں کیا جاسکتا, ٹڈی دل سے نمٹنے کے لئے وفاق تیاری کرے ورنہ کاشتکا روں کی فصلیں تباہ ہوجائیں گی. انہوں نے کہا کہ اس بار اگر فصلوں کو نقصان پہنچا تو اس کی ذمہ دار بنی گالا سرکارہوگی.

اسماعیل راہو

مزید :

علاقائی -