گھر کی طرح پلاٹس پر بھی کیپٹل گین ٹیکس ختم کیا جائے، رئیل اسٹیٹ ایجنٹس

  گھر کی طرح پلاٹس پر بھی کیپٹل گین ٹیکس ختم کیا جائے، رئیل اسٹیٹ ایجنٹس

  

لاہور (رپورٹ:میاں اشفاق انجم،تصاویر:ایوب بشیر)بحریہ ٹاؤن،واپڈاٹاؤن، اسٹیٹ لائف اور ڈی ایچ اے لاہور کے سینئر رئیل اسٹیٹ ایجنٹس کا وزیر اعظم کے تعمیراتی پیکیج کا خیر مقدم،تاریخی اقدام ہے،رئیل اسٹیٹ سیکٹر ہی تعمیر اتی سیکٹر کی اصل بنیاد ہے۔ایف بی آرکے قانون کی شق 111میں تبدیلی کے بغیر زمین کی خریدوفروخت میں اضافہ ممکن نہیں ہے۔مکان کی طرح پلاٹس پر بھی کیپٹل گین ٹیکس ختم کیا جائے ہاؤسنگ سوسائٹیز کے اتھارٹی کی طرف سے روکے گئے کیس فوری منظور کیے جائیں۔تعمیراتی پیکیج کو خود مختار بنانا خوش آئند ہے رئیل اسٹیٹ سیکٹر کو بھی صنعت کا درجہ دے کر 14اپریل سے کھولاجائے ایف بی آراور نیب کا خوف دور کرنے کیلئے فرینڈلی فکس ٹیکس کا نظام فوری نافذ کیا جائے تعمیراتی پیکیج سمیت سی وی ٹی اور اسٹا م ڈیوٹی کا نوٹیفکیشن جاری کیا جائے۔،بحریہ ٹاؤن کے مظفر ہاشمی، شاہد قادری، واپڈاٹاؤن کے میاں شاہ جہان،حاجی رمضان،عاصم فیاض،ڈی ایچ اے لاہور کے میاں زاہد سلام، آصف ملک،بشارت چوہدری،میاں جاوید،سنٹرل پارک کے میاں محمد اشرف،ڈی ایچ اے کے خر م گیلانی،بابا ارشد نجمی،منظور چوہدری،مون ملک،ایم اے طاہر، مصطفی ٹاؤن کے انوار چوہدری،اسٹیٹ لائف کے سیکرٹری میاں عضنفر،ایگزیکٹوممبرمیاں عباس،ڈی ایچ اے کے حاجی ریاض،عقیل عباس ملک،شیفق چغتائی،عاصم جاویدمیاں کا روزنامہ پاکستان سے خصوصی گفتگو میں اظہار خیال۔بحریہ ٹاؤن کے مظفر ہاشمی نے کہا وزیر اعظم کے تعمیراتی پیکیج کا خیر مقدم کرتے ہیں یہ ایک تاریخی اقدام ہے،شاہد قادری نے کہا رئیل اسٹیٹ سیکٹر ہی تعمیراتی سیکٹر کی اصل بنیاد ہے رئیل اسٹیٹ سیکٹر کوبھی صنعت کا درجہ دیا جائے۔واپڈا ٹاؤن کے میاں شا ہ جہان نے کہا ایف بی آرکے قانون میں تبدیلی کے بغیر زمین کی خریدوفروخت میں اضافہ ممکن نہیں ہے۔حاجی رمضان اور عاصم فیاض نے کہا مکان کی طرح پلاٹس پر بھی گین ٹیکس ختم کرنے کو تعمیراتی پیکیج میں شامل کیا جائے۔ ڈی ایچ اے کے میاں زاہد سلام اور آصف ملک نے کہا 2016ء کے نافذ کیے گئے بے جاٹیکس ختم کیے جائیں۔ بشارت چوہدری اور میاں جاوید نے وزیر اعظم کے تعمیراتی پیکیج کو ایک تاریخی پیکیج قرار دیااور کہا کہ اس اثرات دیگر اس سے منسلک صنعتوں پر بھی اثرانداز ہوگے۔سنٹر ل پارک کے میاں محمد اشرف نے کہا کہ ہاؤسنگ سوسائٹیز کے روکے جانے والے کیس اتھارٹی فوری منظور کرئے کیونکہ تعمیراتی سیکٹر رئیل اسٹیٹ سیکٹر کے بغیر ادھورا ہے۔ڈی ایچ اے لاہورکے خرم گیلانی نے تعمیراتی پیکیج کو خودمختا ر بنانا خوش آئند ہے رئیل اسٹیٹ کو بھی صنعت کا درجہ دیا جائے۔منظور چوہدری اور بابا ارشد نجمی نے کہا رئیل اسٹیٹ سیکٹر کو 14اپریل سے کھولا جائے۔مون ملک نے کہا تعمیراتی اور سی ٹی وی کا نوٹیفکیشن جاری کیا جائے۔ایم اے طاہر نے کہا فرینڈلی فکس ٹیکس کا نظام فوری نافذ کیا جائے تاکہ نیب کا خوف دور کیا جاسکے۔مصطفی ٹاؤن کے انوار چوہدری نے کہا تعمیراتی پیکج کو خود مختار بنانا خوش آئند فیصلہ ہے جس سے رئیل اسٹیٹ سیکٹر میں خوشی کی لہر ڈور گئی ہے۔اسٹیٹ لائف کے سیکرٹری میا ں غضنفر اور ایگزیکٹو ممبر میاں عباس نے کہا ہاؤسنگ سوسائٹیز کے اتھارٹی کی طرف سے روکے گئے کیس فوری منظور کیے جائیں۔ڈی ایچ اے کے حاجی ریاض نے کہا وزیر اعظم کاتعمیراتی پیکیج رئیل اسٹیٹ سیکٹر پر مثبت اثرات مرتب کرے گا۔عقیل عباس ملک نے کہا کیپٹل گین ٹیکس پلاٹس پر بھی ختم کیا جائے،انہوں نے رئیل اسٹیٹ سیکٹر کو صنعت کا درجہ دینے کا مطالبہ بھی کیا۔شفیق چغتائی اور عاصم جاوید میاں نے وزیر اعظم کے تعمیر اتی پیکیج کا خیر مقدم کیا اور کہا تعمیر اتی پیکیج کی تفصیلات جلد از جلد جاری کی جائیں،انہوں نے کہا کہ رئیل اسٹیٹ سیکٹر ہی تعمیراتی سیکٹر کی اصل بنیاد ہے۔

رئیل اسٹیٹ ایجنٹس

مزید :

صفحہ آخر -