اشیاء خور د ونوش کی دستیابی کو یقینی بنایا گیا‘ محب اللہ

اشیاء خور د ونوش کی دستیابی کو یقینی بنایا گیا‘ محب اللہ

  

پشاور (سٹاف رپورٹر)خیبرپختونخوا کے وزیر زراعت و لائیو سٹاک محب اللہ خان کی زیر صدارت ایک سطح اجلاس آج پشاور منعقد ہوا جس میں کورونا وائرس سے پیدا ہونے والی صورت حال سے صوبے میں گوشت، سبزیوں، پھلوں و دودھ، مچھلی اور دیگر ضروری غذائی اشیاء کی دستیابی کو یقینی بنایا گیا ہے اور ان اشیاء کو وقتاً فوقتاً حکومت کے مقرر کردہ نرخوں پر فروخت کے حوالے سے غور و خوض بھی ہوا۔ اجلاس میں سیکرٹری زراعت و لائیو سٹاک اسرار خان، ایڈیشنل سیکرٹری کبیر آفریدی، چیف پلاننگ آفیسر مرتضیٰ شاہ، زراعت و لائیو سٹاک کے شعبوں کے ڈی جیز اور دیگر افسران نے شرکت کی۔اس موقع پر صوبائی وزیر زراعت کو صوبہ بھر بشمول ضم شدہ اضلاع میں محکمہ زراعت و لائیو سٹاک کے تحت موجودہ حالات سے نمٹنے کے لئے اٹھائے گئے اقدامات سے آگاہ کیا اور بتایا گیا کہ ضلعی افسران قصابوں، دودھ فروشوں اور سبزی فروشوں کی دکانوں، مارکیٹوں کے دورے کرکے صورت حال کا بغور جائزہ لے رہے ہیں تاہم بازارو ں میں عوام کی ضرورت کی چیزوں خاص کر سبزیاں، پھل، دودھ اور موشیوں کے لئے بھوسہ اور ان کے علاج معالجہ کی ادویات سمیت کسی چیز کی قلت نہیں ہے اور یہ مقررہ نرخوں پر فراہم کی جارہی ہیں جبکہ صوبائی حکومت کی ہدایت کے تحت محکمہ زراعت کسان مارکیٹوں میں اشیائے خورد کے معائنہ کے ساتھ ساتھ سبزیاں، فروٹ وغیر آن لائن ایب کے ذریعے (ہوم ڈیلوری) گھروں پر عوام فراہم کرنے کے لئے بھی اقدامات اٹھا رہی ہے۔ صوبائی وزیر نے محکمہ زراعت کے اقدامات پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے متعلقہ افسران کی کاوشوں کو سراہا اور ا نہیں ہدایات دیں کہ وہ موجودہ صورت حال کا مقابلہ کرنے کے لئے اپنی جدوجہد اسی طرح جاری رکھیں اور جہاں کہیں مشکلات درپیش ہوں تو وہ ان کے نوٹس میں لائیں تاکہ عوام کو کسی قسم کی پریشان کا سامنا نہ کرنا پڑے۔ انہوں نے ا فسران کو تاکید کی کہ وہ پورے صوبے بشمول ضم شدہ اضلاع میں تمام مارکیٹوں اور دکانوں پر موجود اشیاء کا روزانہ کی بنیاد پر جائزہ لیتے رہیں تاکہ کسی قلت اور گرانی کی صورت حال پیدا نہ ہو۔ صوبائی وزیر نے یقین دلایا کہ کورونا کے باعث گندم کی کٹائی متاثر نہیں ہو گی، فصل کے تیار ہونے پر اس کی کٹائی کے لئے انتظامات کرلئے گئے ہیں۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -