تحصیل بخت بھائی میں کرونا وائرس کی وجہ سے مکمل لاک ڈاؤن

تحصیل بخت بھائی میں کرونا وائرس کی وجہ سے مکمل لاک ڈاؤن

  

شیرگڑھ (نامہ نگار) ملک بھر کی طرح تحصیل تخت بھائی میں بھی کرونا وائرس کی وجہ سے مکمل لاک ڈاون جاری ہے تمام شاپنگ ہالز حجام اور بیوٹی پارلر کی دکانوں کے علاوہ دیگر مختلف قسم کی دکانیں بند ہیں طویل بندش سے عوام سخت مشکلات کا شکار ہے مہنگائی نے بھی عوام کے اوسان خطا کر دئیے ہیں آٹے کی قیمتوں میں بے تخاشا اضافے نے عوام کی زندگی اجیرن بنا دی ہے یوٹیلٹی سٹوروں میں بھی آٹا نایاب ہو چکا ہے چینی دالوں اور گھی کی قیمتیں غریب عوام کے بس سے باہر ہیں گوشت400 اور450پر فروخت ہو رہے ہیں کاروباری مراکز کی بندش سے روزانہ اجرت پر کام کرنے والے ہزاروں مزدور مشکلات کا شکار ہیں اور بچوں کے پیٹ پالنے کے لئے صبح سویرے راشن اور مزدوری کی امید پر گھروں سے نکلتے ہیں لیکن مایوس لوٹتے ہیں تخت بھائی کے سیاسی و سماجی حلقوں نے مرکزی اور صوبائی حکومت سے اپیل کی ہے کہ رمضان المبارک کا مقدس مہینہ آنے والا ہے اور ہم بے روزگار ہیں فوری طور متبادل کا اعلان کریں ملک کے دیگر علاقوں کی طرح تخت بھائی شیر گڑھ ہاتھیان اور لوند خوڑ کے تمام مارکٹیں بند پڑے ہیں اور تمام بازاروں میں مکمل لاک ڈاون پر عمل پیرا ہیں لیکن طویل لاک ڈاون کی وجہ سے محنت کش طبقہ سخت مشکلات کا شکار ہے کیونکہ روزانہ اجرت پر کام کرنے والے دیاڑی مار مزدورایک ایک وقت کھانے کے لئے ترستے ہیں اور گھروں میں اشیاء و خورد ونوش کی قلت کی بدولت مختلف سیاسی و سماجی حلقوں کے دفاتروں کے طواف کرنے پر مجبور ہیں حکومت کے طرف سے بے روزگار اور متاثرہ افراد کے لئے احساس پروگرام کے تحت امداد کا سلسلہ شروع کیا ہے جو قابل تحسین ہے مگر اب بھی مستحقین کی بڑی تعداد امداد سے محروم ہیں تخت بھائی کے سیاسی و سماجی حلقوں نے صوبائی اور مرکزی حکومت فوری ریلیف فراہم کرنے کا مطالبہ کیا ہے

مزید :

پشاورصفحہ آخر -