نجی سکولز فیسیں‘ حکومت بدستور غیرسنجیدہ‘صرف اعلانات‘ عوام کو ”لولی پاپ“

نجی سکولز فیسیں‘ حکومت بدستور غیرسنجیدہ‘صرف اعلانات‘ عوام کو ”لولی پاپ“

  

ملتان (سٹاف رپورٹر) افسران تعلیم نے پرائیویٹ سکولز کی فیسوں کے مسئلے کی ذمہ دار حکومت کو قرار دے دیا‘ حکومت پرائیویٹ سکولز کی فیسوں میں کمی بارے غیر سنجیدہ‘ محض اعلان کرکے عوام کو لولی پاپ دے دیا۔ بتایا گیا ہے کہ پرائیویٹ سکولز کی طرف سے طلبا وطالبات سے کرونا وائرس کے مسئلے کے پیش نظر ہونے والی تعطیلات کی مکمل اور یکمشت فیسیں جبری وصول کرنے کا سلسلہ جاری ہے اور اس سلسلے میں حکومت کوئی عملی اقدام نہیں کر رہی ہے۔اس بارے میں مختلف(بقیہ نمبر53صفحہ6پر)

افسران تعلیم نے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر بتایا کہ حکومت اس بارے میں غیر سنجیدہ ہے کیونکہ بیشتر سیاستدانوں و بیوروکریٹس سمیت اہم شخصیات نے دوسروں کے نام پرتعلیمی ادارے کھول رکھے ہیں‘ حکومت نے پہلے پرائیویٹ سکولز کی فیسوں میں 50فیصد کمی کا اعلان کیا‘اس کے بعدصوبائی وزیر تعلیم پنجاب مراد راس نے اعلان کیاکہ فیسوں میں 20فیصد کمی اور یکمشت فیسیں نہ لینے کا آرڈرجاری کر دیا گیا ہے مگر ایسا نہیں کیا گیا کیونکہ حکومت عوام کو محض لولی پاپ دے رہی ہے۔لاک ڈاؤن اور تعلیمی اداروں کی بندش کو اتنے دن گزر گئے ہیں اور ابھی تک یہ مسئلہ جوں کا توں چلا آرہا ہے اور ایک تو لاک ڈاؤن سے لوگوں کے کاروبار بند ہیں تو دوسری طرف پرائیویٹ سکولز بچوں کی مکمل اور یکمشت فیسیں جبری طور پر وصول کر رہے ہیں اور انہیں فیسوں کے واؤچر دئیے جارہے ہیں‘ان میں محض چند سکولز ہی ہیں جو اپنے طور پر طلباوطالبات کے والدین کو ریلیف دے رہے ہیں مگر بیشتر تعلیمی ادارے لوٹ کھسوٹ کا بازار گرم کئے ہوئے ہیں۔طلباو طالبات کے والدین سمیت تعلیمی حلقوں نے وزیر اعلی ٰ پنجاب سے صورتحال کا نوٹس لینے اور فوری اقدامات کرنے کا مطالبہ کیاہے۔

لولی پاپ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -