کراچی، ڈاکٹروں سمیت طبی عملے کے 20افراد میں کورونا وائرس کی تشخیص 

کراچی، ڈاکٹروں سمیت طبی عملے کے 20افراد میں کورونا وائرس کی تشخیص 

  

کراچی(این این آئی) پاکستان کے سب سے بڑے شہر کراچی میں ڈاکٹروں سمیت طبی عملے کے 20 افراد میں کورونا وائرس کی تشخیص ہوئی ہے،عباسی شہید اسپتال، لیاقت نیشنل اسپتال، ڈاؤیونیورسٹی اوجھا اسپتال، سول اسپتال اور شہید بینظیر ٹراما سینٹر کے ڈاکٹروں سمیت طبی عملے کے افراد کورونا کا شکار ہوئے ہیں۔تفصیلات کے مطابق کرونا وائرس کے متاثرہ مریضوں کا علاج کرنے والے ڈاکٹرز اور پیرا میڈیکس بھی وائرس سے متاثر ہونے لگے، کراچی سول اسپتال اور بے نظیر بھٹو ٹراما سینٹر میں طبی عملے کے20 افراد میں کرونا وائرس کی تصدیق ہو گئی ہے۔کراچی سول اسپتال ایمرجنسی کے ایک ڈاکٹر اور پیرا میڈیکل اسٹاف کے 3 افراد میں کرونا وائرس کی تصدیق ہو چکی ہے، جس کے بعد سرجیکل وارڈ فور کو ڈس انفیکٹ کیا گیا۔ ایس سول اسپتال ڈاکٹر خادم قریشی نے بتایا کہ سرجیکل وارڈ 4 میں ڈس انفیکٹڈ اسپرے کا عمل مکمل کر لیا گیا ہے، تمام ڈاکٹرز کو پی پی ای پہلے ہی فراہم کی جا چکی تھیں، ہسٹری کے مطابق تمام عملے کو وائرس باہر سے منتقل ہوا۔ انھوں نے متاثرہ سرجیکل وارڈ کے عملے کو احتیاط سے کام کرنے اور سب کے ٹیسٹ کرنے کی بھی ہدایت کی۔شہید محترمہ بینظیر بھٹو ٹراما سینٹر کے بھی 6 ڈاکٹروں اور 7 پیرا میڈیکل اسٹاف میں کرونا وائرس میں مبتلا ہو گئے ہیں۔ کراچی کے عباسی شہید اسپتال میں بھی 2 ڈاکٹر کرونا وائرس میں مبتلا ہو گئے۔ ڈا یونی ورسٹی کے اوجھا کیمپس کے عملے اور ڈاکٹر سمیت 8 افراد میں بھی وائرس کی تصدیق ہوئی ہے۔کراچی میں بچوں کے سب سے بڑے اسپتال قومی ادارہ برائے اطفال کے 2 ڈاکٹر وں اور پیرا میڈیکل اسٹاف کے 2 افراد میں بھی کرونا وائرس پایا گیا، جس کے بعد انھیں آئیسولیٹ کر کے متعلقہ وارڈ میں جراثیم کش اسپرے کیا گیا۔ قومی ادارہ صحت برائے اطفال کے 4 ملازمین میں کورونا وائرس کی تصدیق کے بعد ادارے کے سربراہ ڈاکٹر جمال رضا نے کہا کہ جس شعبے میں ڈاکٹر اور پیرا میڈیکل اسٹاف تعینات تھے، وہ خالی کرا لیے ہیں۔

مزید :

صفحہ آخر -