بزمِ ریاض کے زیراہتمام ورچوئل بزم کیفے کی تقریب منعقد کی گئی

بزمِ ریاض کے زیراہتمام ورچوئل بزم کیفے کی تقریب منعقد کی گئی
بزمِ ریاض کے زیراہتمام ورچوئل بزم کیفے کی تقریب منعقد کی گئی

  

ریاض (وقار نسیم وامق) سعودی دارالحکومت ریاض کی معروف سماجی، ادبی و ثقافتی تنظیم بزمِ ریاض نے کورونا وائرس کے سبب جاری لاک ڈاﺅن میں آن لائن ورچوئل بزم کیفے کی تقریب منعقد کی جس میں اراکینِ بزم نے بھرپور شرکت کی، تقریب کا باقاعدہ آغاز تلاوتِ قرآنِ کریم سے ہوئی جس کی سعادت وقار نسیم وامق نے حاصل کی جبکہ ہدیہ نعتِ رسول کریمؐ تنویر میاں نے پیش کیا. ورچوئل بزم کیفے سے خطاب کرتے ہوئے صدرِ بزم تصدق گیلانی نے بزم کے جملہ امور کا جائزہ پیش کیا اور کہا کہ ہم اپنی شاندار روایت کے تحت آئندہ بھی بزم کی محافل سجاتے رہیں گے اور مثبت سوچ اور فکر کے عمل کو پروان چڑھاتے رہیں گے، وباء کے ان دنوں میں ہمارا متمع نظر لوگوں کی حوصلہ افزائی کرنا ہے اور ان کو یہ باور کروانا ہے کہ زندگی میں درپیش آنیوالے ہر امتحان کا سامنا صبر اور استقلال کے ساتھ کریں.

بزم کے چیئرمین ریاض راٹھور نے کہا کہ زندگی امتحان لیتی ہے اور ہمیں کامیابی کے ساتھ امتحان دینا ہوتا ہے، ہر مشکل کے بعد آسانی ہوتی ہے، بزمِ ریاض کے تمام اراکین اپنے مثبت فکروعمل سے لوگوں کو کورونا کی اس وباء سے حفاظتی تدابیر کی طرف راغب کرتے رہیں.لاہور سے بزمِ ریاض کے مشیر محمد تنویر میاں نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ بزم اپنے تمام تر وسائل بروئے کار لاتے ہوئے مصیبت کی اس گھڑی میں اپنا ہر ممکن کردار ادا کرنے کے لئے تیار ھے، بزم کا ہر رکن خدمتِ خلق کے جذبے سے سرشار ہے، خدمتِ خلق ہمارا دینی اور قومی فریضہ ہے. 

بزمِ ریاض کے سیکرٹری جنرل اور ورچوئل بزم کیفے کے ناظم وقار نسیم وامق نے اس موقع پر اپنے اشعار پیش کئے، انتخاب پیش خدمت ہے

وہ ہنسی باقی نہیں، وہ مسکرانا بھی نہیں

اب وہ پہلے کی طرح ملنا ملانا بھی نہیں

گھر سے ہم کم ہی نکلتے ہیں بجا کہتے ہو تم

سچ اگر پوچھو تو نکلنے کا زمانہ بھی نہیں

علاوہ ازیں انہوں نے کہا کہ دنیا میں اس وقت کورونا وائرس کے سبب ہم سب کے لئے یہ آزمائش کی گھڑی ہے، بزمِ ریاض کے تحت تمام اراکین کو جو ذمہ داریاں سونپی گئیں ہیں وہ انہیں بااحسن طریقے سے سرانجام دینے کی ہرممکن کوشش کریں.ابھاء سے بزمِ ریاض کے سنیئر رکن آر جے فواد اور بابر علی نے بھی ورچوئل بزم کیفے سے خطاب کیا اور کہا کہ یہ ہمارا اولین فریضہ ہے کہ ہم زیادہ سے زیادہ دکھی انسانیت کے کام آئیں اور خدمت کو اپنا نصب العین بنائیں.

ورچوئل بزم کیفے سے خطاب کرتے ہوئے بزم کے مشیر حسن مہدی اور سنیئر اراکین ارسلان بلوچ، منوحہ فاضل اور عادل محمود نے باہمی یکجہتی پر زور دیتے ہوئے کہا کہ کورونا وائرس کے اس دور میں اخوت اور رواداری کا بھرپور مظاہرہ کرنا ہوگا اور معاشرے کی بہتری کے لئے ہمیں اپنے فرائض انتہائی ذمہ داری سے ادا کرنے ہونگے، عادل محمود نے ڈیجٹل بیٹھک پروگرام کے تحت بزمِ ریاض کا پیغام نشر کرنے کے عملی منصوبے سے متعلق بریفنگ دی. 

آن لائن ورچوئل بزم کیفے کی تقریب کے دوران منوحہ فاضل، ارسلان بلوچ اور تنویر میاں نے اپنی فنکارانہ صلاحیتوں کا مظاہرہ بھی کیا، تنویر میاں نے فیض احمد فیض کی نظم اور پنجابی گیت سنا کر سماں باندھ دیا، ارسلان بلوچ نے ترنم ریز گیت پیش کیا جبکہ منوحہ فاضل نے طبلہ کی شاندار پرفارمنس پیش کی.بزمِ ریاض کے اراکین کی جانب سے منوحہ فاضل کو ایسٹر کی مبارکباد دی گئی، تقریب کے اختتام پر بزم کا مشترکہ اعلامیہ پیش کیا گیا جس کے مطابق بزم کا ہفتہ وار اجلاس منعقد کرنے پر اتفاق کیا گیا اور اراکینِ بزم کو اپنی ذمہ داریوں کا پابند بنانے اور آئندہ اجلاس کا لائحہ عمل طے کیا گیا.

مزید :

عرب دنیا -تارکین پاکستان -