سندھ حکومت غلط فیصلے کر کے افراتفری پیدا کر رہی ہے، حلیم عادل شیخ

سندھ حکومت غلط فیصلے کر کے افراتفری پیدا کر رہی ہے، حلیم عادل شیخ

  

کراچی(اسٹاف رپورٹر)پی ٹی آئی مرکزی نائب صدر سندھ اسمبلی میں پی ٹی آئی کے پارلیمانی لیڈر حلیم عادل شیخ نے سندھ حکومت کی ناقص کارکردگی پر اپنے جاری کردہ وڈیو بیان میں کہا ہے کہ گزشہ رات سے ایک ڈراما چلایا گیا کوئی کہہ رہا تھا متاثرہ ہوسیز بند ہورہی ہیں، کوئی کہہ رہا تھا بند نہیں ہورہی ہیں عوام میں افرا طفری جیسا اچانک ماحول پیدا کیا گیا عوام کو کوئی قبل از وقت کی آگاہی نہیں دی گئی، پھر کسی اور وزیر نے کہا بند کراچی کی یوسیز بند نہیں ہورہی ہیں کرفیو نہیں ہوگا۔ جن کراچی کی یونین کاؤنسل کو بند کرنے کا ذکر کیا گیا تھا ان ان حلقوں میں ہماری اکثریت ہے عوام تنگ ہوچکی۔ سندھ حکومت کی نااہلی ہے بغیر کسی حکمت عملی کے نادر احکامات جاری کروا ئے جاتے ہیں۔ پہلے لاک ڈاؤن کی وجہ سے عوام بیزار ہوچکی ہے متعدد مقدمات و گرفتاریاں ہوچکی ہیں۔ ایسی صورتحال میں پولیس اور رینجرس کو عوام کے سامنے کھڑا کرنا چاہتے ہیں۔پولیس اور رینجرز کا کوئی قصور نہیں ہے جن کو ڈائریکیشن مثبت انداز میں نہیں دی جاتی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ سندھ حکومت کی ترجمانی پر پیپلزپارٹی کے رہنما لڑ رہے ہوتے ہیں عوام کو معلوم ہی نہیں سندھ حکومت کا ترجمان کون ہے۔ بلاول زرداری عوام کو کلیئر کریں کہ سندھ حکومت کا ترجمان کون ہے۔؟آپس میں ترجمان لڑنے کے بجائے عوام کی خدمت کریں۔ وزیر اعلیٰ نے جو میڈل لینے تھے لے لئے برائے مہربانی اب جلدبازی سے کام نہ لیں۔ تمام تر فیصلے عوام کے مفادات میں لئے جائیں۔انہوں نے مزید کہا احساس پروگرام وفاق کا ہے آپکی بی آئی ایس پی کی چیئرپرسن فرزانہ راجا تھیں جس پر 56 ارب کی کرپشن کیس ہے جو ابھی تک چل رہا ہے۔آپکی بی آئی ایس پی میں 8 لاکھ صاحب حیثیت افراد کو آپ نے شامل کیا تھا جسے وفاق نے نکالا۔ احساس پروگرام سے بڑا پروگرام پاکستان کی تاریخ میں نہیں آیا جس میں بنا کسی تفریق کے غریبوں کی مدد کی جارہی ہو۔ پیپلزپارٹی والے احساس پروگرام مین سیاست نہ کریں یہ غریبوں کی مدد کے لئے وفاق کا پروگرام ہے۔ اپنے فوٹو بنا کر عوام کو گمراہ کیا جارہا ہے لیکن عوام گمراہ ہونے والی نہیں ہے پیپلزپارٹی کے کالے کرتوتوں سے با خوبی واقف ہے۔چیف سیکریٹری وفاق کے نمائندہ ہیں سندھ میں احساس پروگرام کو غیر سیاسی بنانا ان کی ذمہ داری ہے۔ چیف سیکریٹری اپنی ذمہ داری نبھانے میں ناکام ہوچکے ہیں۔ لاک ڈاؤن کو 21 دن گذر چکے ایک لاکھ خاندانوں تک سندھ حکومت راشن نہیں دے سکی۔ اعلان تو لاکھوں خاندان کو راشن دینے کا کیا گیا تھا سندھ حکومت جو راشن دے رہی ہے وہ سیاسی طور پر اپنے ہی پارٹی کے کارکنوں کو دیا جارہا ہے غریب عوام سندھ حکومت کے راشن سے تاحال محروم نظر آہی ہے۔ سندھ حکومت عوام کی مدد کرے عوام گھروں میں محصور ہے یہ وقت سیاسی مفادات حاصل کرنے کا نہیں ہے۔ عمران خان غریب عوام کی خدمت کرنے میں یقین رکھتے ہیں جنہوں نے ہمیشہ غریب عوام کی بات کی ہے

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -