قرارداد پاکستان علامہ اقبال نے پیش کی، پنجاب اسمبلی کے ”شیروں“ نے تاریخ بدل دی

قرارداد پاکستان علامہ اقبال نے پیش کی، پنجاب اسمبلی کے ”شیروں“ نے تاریخ بدل ...
قرارداد پاکستان علامہ اقبال نے پیش کی، پنجاب اسمبلی کے ”شیروں“ نے تاریخ بدل دی

  

لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک) قرداد پاکستان علامہ اقبال نے پیش کی اور قائداعظم پتہ نہیں کب پیدا ہوئے، یہ جواب پرائمری سکول کے بچوں کا نہیں بلکہ پنجاب اسمبلی کے وزیروں اور اراکین کا ہے ۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق پنجاب اسمبلی کے اجلاس کے دوران حکومتی اور اپوزیشن ارکان قرارداد پاکستان، قائداعظم محمد علی جناح کی تاریخ پیدائش سمیت کئی سوالوں کا جواب دینے میں ناکام رہے۔ وزیر توانائی شیر علی سے پوچھا گیا کہ قائداعظم کی تاریخ پیدائش اور کس سال پیدا ہوئے تو وہ سوچ بچار کے بعد تاریخ پیدائش بتانے میں تو کامیاب ہو گئے لیکن پیدائش کا سال بتانے میں ناکام رہے۔ راجہ اشفاق سرور سے پوچھا گیا کہ قرارداد پاکستان کس نے اور کب پیش کی تو انہوں نے جواب دیا کہ قرارداد پاکستان علامہ اقبال نے پیش کی۔ رکن اسمبلی وحید گل سے جب یہی سوال کیا گیا تو انہوں نے کہا یہ کسوٹی کا سوال کیوں پوچھ رہے ہیں تاہم چند منٹ سوچنے کے بعد وہ جواب دینے میں ناکام رہے اور یہ کہہ کر چل دیئے کہ اجلاس کے بعد بتاﺅں گا۔ خواجہ عمران نذیر سے پوچھا گیا کہ پاکستان کو بنے کتنے برس ہو گئے ہیں تو انہوں نے کہا کہ آپ 1947ءکے بعد اب تک جتنے سال بنتے ہیں اس کا خو حساب لگا لیں۔ رخسانہ کوکب، عائشہ جاوید، طارق گل سمیت متعدد ایسے ارکان جن سے پوچھا گیا کہ قرارداد پاکستان کس نے پیش کی، قائداعظم کا پیدائش کا سال کون سا ہے، پاکستان کا نام کس نے رکھا تو وہ صحیح جواب دینے میں ناکام رہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس