مون سون کی کم بارشوں اور گرم و خشک موسم کی وجہ سے کپاس کی بی ٹی اقسام پر رس چوسنے والے کیڑوں کا حملہ

مون سون کی کم بارشوں اور گرم و خشک موسم کی وجہ سے کپاس کی بی ٹی اقسام پر رس ...

فیصل آباد(آن لائن ) امسال مون سون کی کم بارشوں اور گرم و خشک موسم کی وجہ سے کپاس کی بی ٹی اقسام پر رس چوسنے والے کیڑوں تھرپس ، سبز تیلہ اور سفید مکھی کا حملہ نوٹ کیا گیاہے یہ بات ڈاکٹر عابد محمود ڈائریکٹر جنرل زرعی تحقیقاتی ادارہ فیصل آباد نے بتائی انہوں نے کاشتکاروں کو سفارش کی ہے کہ وہ فصل کپاس کوان نقصان رساں کیڑوں کے حملہ سے محفوظ رکھنے کے لیے ہفتہ میں دوبار پیسٹ سکاﺅٹنگ کریںاور زرعی ماہرین سے قریبی رابطہ رکھیں۔

تھرپس کے حملہ کی وجہ سے کپاس کے پتوں کی نچلی سطح چاندی کی طرح چمکیلی ہوجاتی ہے اورپتے چڑ مڑ ہوجاتے ہیں۔8تا10بالغ تھرپس اوربچے فی پتہ معاشی نقصان کی حد ہیں۔ تھرپس کے کیمیائی انسداد کے لیے تھایاکلوپریڈ48فیصدایس سی 100ملی لیٹریاایسیفیٹ 97فیصد ڈی ایف 300گرام یا ڈائی میتھو ایٹ 40فیصد ای سی 300تا 400ملی لیٹر فی 100لیٹر پانی میں ملا کر سپرے کریں۔انہوں نے بتایا کہ سفید مکھی فصل کپاس میں 3طرح سے نقصان کرنے کا باعث بنتی ہے۔بالغ اور بچے رس چوس کر پودوں کو کمزور کرتے ہیں رس چوسنے کے علاوہ سفید مکھی میٹھا لیسدار مادہ بھی خارج کرتی ہے۔جس پر سیاہ رنگ کی الیّ لگ جانے سے پودے کے حملہ شدہ حصے سیاہ ہوجاتے ہیں جو ضیائی تالیف میں رکاوٹ کا باعث بنتے ہیں۔سفید مکھی کاشدید حملہ کپاس کی پیداوار میں کمی کا باعث بنتا ہے۔مزید برآں سفید مکھی کپاس میں وائرسی بیماریوں کو ایک پودے سے دوسرے پودوں تک پھیلانے کا ذریعہ بھی بنتے ہیں۔سفید مکھی خشک آب وہوا اور زیادہ درجہ حرارت جیسے موجودہ حالات میں فصل کپاس پر حملہ آور ہورہی ہے۔پانچ بالغ یا بچے یا دونوں ملا کر پانچ فی پتہ سفید مکھی کی معاشی نقصان کی حد ہیں۔سفید مکھی کے کیمیائی تدارک کے لیے پائری پروکسی فن 10.8فیصد ای سی بحساب 500ملی لیٹر یا ڈایا فینتھیوران 4فیصد ایس سی بحساب200ملی لیٹر یا اسیٹا میپرڈ 20فیصد ایس ایل بحساب 125ملی لیٹر فی 100لیٹر پانی میں ملا کر سپرے کریں ۔سپرے کرنے کے 48گھنٹے بعد فصل کپاس کا تفصیلی معائنہ کریں۔رس چوسنے والے کیڑوں کا حملہ ختم نہ ہونے کی صورت میں 5سے 6دن بعد زہریں بدل کردوسرا سپرے کریں۔ڈاکٹر عابد محمود نے کاشتکاروں کو بتایا ہے کہ سفید مکھی اور دیگر رس چوسنے والے کیڑوں کے متبادل میز بان پودوں اور جڑی بوٹیوں کی بروقت تلفی یقینی بنائیں تاکہ ان رس چوسنے والے کیڑوں کو پرورش پانے کا موقع نہ مل سکے اوریہ فصل کپاس پر منتقل نہ ہوسکیں۔

مزید : کامرس


loading...