چاروا سیکٹرمیں بھارت کی فائرنگ قابل مذمت،جواب دیا جائے،وسیم اختر

چاروا سیکٹرمیں بھارت کی فائرنگ قابل مذمت،جواب دیا جائے،وسیم اختر

 لاہور(نمائندہ خصوصی)پارلیمانی لیڈر وامیر جماعت اسلامی پنجاب ڈاکٹر سید وسیم اخترنے چار واسیکٹرمیں بھارت کی جانب سے بلااشتعال فائرنگ اور اس کے نتیجے میں ماں بیٹی شہید اور چار افراد کے زخمی ہونے پراپنے شدید غم وغصے کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ بھارت آئے روز کنٹرول لائن کی خلاف ورزی کرتارہتا ہے جب تک اسے موثر جواب نہیں دیاجائے گا وہ اپنی شر انگیزی سے بازنہیں آئے گابھارتی ڈپٹی کمشنر کی رسمی دفترخارجہ طلبی قابل قبول نہیںحکومت پاکستان18کروڑ عوام کے جذبات کا احترام کرتے ہوئے بھارتی سفیر کوملک کو بدر کرے ۔انہوں نے کہاکہ بھارت ہماراازلی دشمن ہے انڈین حکومت ہر سال پاکستان میں حالات خراب کرنے کے لئے زرکثیرخرچ کررہی ہے بلوچستان میں دہشتگردی کے واقعات سے لے کر آبی جارحیت تک ہندوستان کاہاتھ نظر آتا ہے انڈیاپاکستان کے حصے کے دریاﺅں پر62سے زائد ڈیم تعمیر کررہاہے جس سے نہ صرف وطن عزیز کی زرخیز زمین بنجر ہوجائے گی بلکہ فصلوں کے لئے پانی بھی دستیاب نہیں ہوگااور انرجی سیکٹربھی مزیدخراب صورتحال میں چلاجائے گاضرورت اس امر کی ہے کہ حکومت پاکستان جہاں بھارت سے دوستی بڑھانے کے خواب دیکھ رہی ہے وہاں کشمیر،بلوچستان،آبی جارحیت اورملک میں دہشت گردی کے علاوہ ہندوستان کے ماضی کے کردار کو نظر اندازہرگزنہ کرے پارلیمانی لیڈر ڈاکٹر سید وسیم اختر نے مزید کہاکہ جب تک بھارتی حکمران کشمیر میں مظالم ختم اور آبی جارحیت نہیں بند کرتے دوستی کے حوالے سے کسی قسم کے تعلقات استوارنہیں ہوسکتے چارواسیکٹر پر بھارت کی جانب سے کھلم کھلا دہشت گردی کے واقعات پاکستانی حکمرانوں اور دشمن کے ساتھ دوستی کادم بھرنے والوں کی آنکھیں کھولنے کے لئے کافی ہے۔                                جاری کردہ

مزید : میٹروپولیٹن 1


loading...