انتطامیہ کی عدم توجہی، اشیاءخوردونوش سمیت دیگر اشیاءمہنگی ہو گئیں

انتطامیہ کی عدم توجہی، اشیاءخوردونوش سمیت دیگر اشیاءمہنگی ہو گئیں

لاہور(وقائع نگار)حکومت اور اپوزیشن کی بڑھتی ہوئی محاذ آرائی اور تمام حکومتی مشینری کی عدم توجہی اور انتظامی امور سے ہٹ کر اپوزیشن کی طرف ڈیوٹیاں لگنے کے باعث مارکیٹوں اور منڈیوں میں اشیاءخوردونوش سمیت دیگر اشیاءمہنگی ہو گئیں۔ شہریوں نے افواہوں اور خوف کی وجہ سے اپنے گھروں میں آٹا ،چینی اور دالیں وغیرہ ذخیرہ کرنی شروع کر دیں جس کے باعث مارکیٹوں میں اکثر روز مرہ اشیاءکی قیمتیں بڑھنے کے علاوہ چیزیں ناپید ہو گئیں۔ گزشتہ روز بھی سبزی و فروٹ منڈیوں میں طلب کے مطابق رسد میں کمی کے باعث پرچون مارکیٹ میں سبزیوں کی قلت دیکھائی دی اور جن دوکانوں پر سبزیاں موجود تھیں ان کے نرخ عام آدمی کی قوت خرید سے باہر تھے ۔گزشتہ روزپرچون میں ٹماٹر 120 روپے کلو ، ٹینڈے اور بھنڈیاں 100روپے کلو، آلو 80سے 90روپے کلو اور دیگر تمام سبزیوں کی قیمتوں میں 20سے 40فیصد اضافہ دیکھائی دیا۔ دس کلو آٹے کی بوری 420روپے اور تمام دالیں 10سے 20روپے کلو مہنگی بازار میں دستیاب ہیں ۔

اشیاءمہنگی

مزید : علاقائی


loading...