طیب اردگان کا جان نشین کون ہو گا؟ ترکی میں ایک نئی بحث چھر گئی

طیب اردگان کا جان نشین کون ہو گا؟ ترکی میں ایک نئی بحث چھر گئی
طیب اردگان کا جان نشین کون ہو گا؟ ترکی میں ایک نئی بحث چھر گئی

  


 لاہور(اسلم بھٹی) ترکی کے صدارتی الیکشن میں موجودہ وزیر اعظم رجب طیب اردگان جو اپنی پارٹی جسٹس اینڈ ڈیویلپمنٹ پارٹی کے چئیرمین بھی ہیں کی بطور صدر کامیابی کے بعد ایک نئی بحث چھڑگئی ہے کہ ان کا آئندہ جان نشین کون ہو گا؟ صدارتی انتخابات میں کامیابی کے بعد ملک کے وزارت عظمیٰ اور پارٹی چئیرمین شپ کے دونوں اہم عہدے خالی ہوں جائیں گے۔ ان عہدوں پر کون فائز ہو گا؟ اس بارے ترک ذرائع ابلاغ میں قیاس آرائیاں جاری ہیں۔ترک آئین کے مطابق ملک کا صدر غیر جانبدار ہوتا ہے اور وہ کسی سیاسی جماعت کا نمائندہ یا ممبر نہیں بن سکتا۔ اسے اپنے فرائض غیر جانبدار رہ کر سر انجام دینے ہوتے ہیں۔ اے کے پارٹی کے ذرائع کیمطابق پارٹی کا اہم کنونشن 27 اگست کو منعقد ہو گاجس میں پارٹی کا آئندہ چئیرمین منتخب ہو گا اور جو پارٹی کا چئیرمین ہو گا وہی پارٹی کی جانب سے وزارت عظمیٰ کا امیدوار ہو گا،ان عہدوں پر فائز ہونے کیلئے پارٹی رہنماﺅں میں اہم مشاورت جاری ہے۔ ترکی کے موجودہ صدر عبداللہ گل جو 28 اگست کو اپنے عہدے کی مدت مکمل کر رہے ہیں ان کا کہنا ہے کہ وہ واپس اپنی پارٹی اے کے پارٹی میں آ کر عوام کی خدمت کرنا چاہیں گے،اس بارے میں آئین کی رو سے ملک کا وزیر اعظم بننے کیلئے پارلیمنٹ کا ممبر ہونا ضروری ہے اور پارٹی کا چئیرمین بننے کیلئے پارٹی کا رکن ہونا ضروری ہے جبکہ عبداللہ گل اس وقت صدر ہیں ،فی الحال عہدہ صدارت کی وجہ سے غیر جانبدار ہیں اور نہ ممبر پارلیمنٹ ہیں نہ کسی سیاسی جماعت کے رکن ہیں اس پر طرفہ تماشا یہ کہ ان کی پارٹی ان کے عہدہ صدارت سے ایک روز قبل ہی یعنی 27 اگست کو اپنا چئیرمین منتخب کر رہی ہے جس کے وہ نہ فی الوقت ممبر ہیں اور نہ ہی ان کا عہدہ صدارت انہیں اس قسم کا کسی دوسرا عہدہ سنبھالنے کی اجازت دیتا ہے۔ پھر یہ کہ رجب طیب اردگان کے صدر بننے کے بعد ملک کا نظام پارلیمان سے صدارتی ہو جائیگا اور صدر کو زیادہ سے زیادہ اختیارات حاصل ہونگے اور وزیر اعظم برائے نام اختیار کا مالک ہو گا۔ رجب طیب اردگان نسبتاً وفادار اور تابع دار وزیر اعظم پسند کرینگے جبکہ عبداللہ گل طبیعتاً ایسے نہیں ہیں اور ان کی پارٹی میں بھی ایسے لوگ ہیں جو عبداللہ گل کو واپس پارٹی میں زیادہ متحرک اور اہم عہدے پر نہیں دیکھنا چاہتے۔ترکی کا آئندہ وزیر اعظم اور اے کے پارٹی کا نیا چئیر مین کون ہو گا؟ اس کا پتہ 27 اگست کو چل جائیگا۔

طیب رجب

مزید : علاقائی


loading...