تھانہ میں دو ماہ بند رکھنے کے بعد پیٹر رکشہ توڑ دیا گیا، مالک کے حوالے

تھانہ میں دو ماہ بند رکھنے کے بعد پیٹر رکشہ توڑ دیا گیا، مالک کے حوالے

لاہور(کرائم سیل)لاہور ہائی کورٹ کے حکم پر بند کئے گئے پیٹر رکشہ کو تھانہ باغبانپورہ میں دو ماہ تک بند رکھنے کے بعد توڑ دیا گیااور رکشہ مالک کے حوالے کر دیا گیا۔رکشہ مالک حنیف نے نمائندہ \"پاکستان\" سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ رکشہ کو دوماہ قبل پولیس نے روڈ پیر کے مقام سے اپنے قبضہ میں لیا تھا اور اب عدالتی حکم پر اس کو توڑ دیا گیا ہے ۔یہ رکشہ اس نے 85ہزار روپے کا ایک سال قبل لیا تھا اور اب اس کا سکریپ زیادہ سے زیادہ 6ہزار میں بکے گا،اس کا 79ہزار روپے کا نقصان ہوا ہے،اس کے علاوہ اس کے روزگار کا ذریعہ بھی ختم ہو گیا ہے ۔ رکشہ چلانے والے ڈرائیور خادم حسین اور محمد جاید نے بتایا کہ یہ رکشہ برکی گاؤں میں چلتا تھا دو ماہ قبل وہ ایک سواری کا سامان لے کر روڈ پیر آئے جہاں پر اس کو پولیس اہلکاروں نے پکڑ لیا جبکہ برکی اور اس کے قریبی گاؤں میں اب بھی ایسے کئی پیٹر رکشے چل رہے ہیں ۔ان رکشوں کی کوئی رجسٹریشن نہیں ہوتی ہے اور نہ ہی ان کو حکومت کی جانب سے کوئی نمبر الاٹ کیا جاتا ہے، حکومت کو چاہئے کہ ان رکشوں کی رجسٹریشن کا کوئی نظام متعارف کروایا جائے تاکہ غریب افراد جو کہ ان کو چلا کر روزی کماتے ہیں اور اپنے خاندان کا پیٹ بھرتے ہیں ان کو مشکلات کا سامنا نہ کرنا پڑے۔

مزید : علاقائی


loading...