مختلف ممالک کے سربراہوں کی دلچسپ سواریاں

مختلف ممالک کے سربراہوں کی دلچسپ سواریاں
مختلف ممالک کے سربراہوں کی دلچسپ سواریاں

  


اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان میں حکمرانوں کی بڑی بڑی عالی شان گاڑیاں اور قافلے ہوتے ہیں لیکن دوسرے ممالک کے سربراہ کس طرح کی سواریوں پر سفر کرنا پسند کرتے ہیں۔کچھ سواریاں درج ذیل ہیں۔

اٹلی کے صدر جیورجیونیپولیٹا کے پاس پرتعیش گاڑی موجود ہے لیکن وہ اس کے باوجود تین پہیوں والے رکشے پر سفر کرنا زیادہ پسند کرتے ہیں۔

شمالی کوریا کے صدر کم جونگ ان ڈزنی بوٹ کے نام سے مشہور یاٹ میں سفر کرنے کے بہت شوقین ہیں، اس کشتی کی مالیت 45 لاکھ پاﺅنڈ ہے۔

روسی صدر پیوٹن دلچسپ عادات کی وجہ سے میڈیا پر چھائے رہتے ہیں لیکن چند روز قبل انہیں جیمز بونڈ انداز کی آبدوز پر گلف آف فن لینڈ میں سفر کرتا دیکھ کر سب حیران رہ گئے۔

ملکہ برطانیہ کے پاس گاڑیوں کا ایک میلہ سجا ہوتا ہے لیکن اس سب کے باوجود وہ اندرون ملک رائل ٹرین پر سفر کرنا پسند کرتی ہیں اور دلچسپ بات یہ ہے کہ ٹرین ان کیلئے مخصوص ہے۔

امریکی صدر کا ایئر فورس ون نامی طیارہ دنیا بھر میں مقبولیت حاصل کرچکا ہے۔ یہ طیارہ ہوا میں ایندھن بھر نے کی صلاحیت رکھتا ہے اور ا س طیارے میں ایک بڑا دفتر اور کانفرنس روم بھی موجود ہے۔

سعودی عرب کے بادشاہ شاہ عبداللہ دنیا میں موجود سب سے بڑی superyachts میں سے ایک کے مالک ہیں اس کی لمبائی 147 میٹر ہے جبکہ یہ 22 سال تک سب سے بڑی یاٹ ہونے کا اعزاز بھی رکھے ہوئے ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس


loading...