اجنبی لڑکی سے محبت کی پینگیں بڑھانا مہنگا پڑا،دنیا بھر میں رسوائی

اجنبی لڑکی سے محبت کی پینگیں بڑھانا مہنگا پڑا،دنیا بھر میں رسوائی
اجنبی لڑکی سے محبت کی پینگیں بڑھانا مہنگا پڑا،دنیا بھر میں رسوائی

  


ڈبلن (نیوز ڈیسک) آئر لینڈ میں محبت کے متلاشی ایک نوجوان کا پیار بھرا میسج غلطی سے ایک لڑکی کی بجائے جوا باز کمپنی کے ایڈمنسٹریٹر کو چلا گیا جس نے لڑکی بن کر جواب دینے شروع کردئیے اور ساری گفتگو کو انٹرنیٹ کے لاکھوں صارفین کی تفریح طبع کیلئے عام کردیا۔ سٹیو نامی نوجوان کی ملاقات جیس نامی لڑکی سے ڈبلن شہر کے Dieys Bar نامی شراب خانے میں ہوئی تھی اور اگلے دن اس نے لڑکی کا حال احوال پوچھنے کیلئے اسے میسج بھیجا لیکن غلطی سے یہ Paddy Power نامی جوئے بازوں کی کمپنی کے ایڈمنسٹریٹر کو چلاگیا۔ ایڈمنسٹریٹر نے پیار بھرا میسج دیکھ کر فیصلہ کیا کہ وہ لڑکی بن کر بات کرے گا اور ساتھ ہی ساری گفتگو کو کمپنی کے ٹوئٹر اکاﺅنٹ پر شائع کرنا شروع کردیا۔ نوجوان نے ”لڑکی“ کا حال پوچھا اور اس کے بعد گزشتہ رات کے متعلق گفتگو کی۔ ان کے درمیان شراب نوشی، فٹ بال، پسند ناپسند اور ذاتی نوعیت کی باتیں    ہوئیں جن کے ٹوئٹر پر سامنے آنے پر کمپنی کے لاکھوں شائقین نے چٹ پٹے تبصرے بھی جاری رکھے۔ بالآخر جب گفتگو زیادہ ہی ذاتی نوعیت کی ہوگئی اور معاملہ جنسی موضوعات کی طرف بڑھ گیا تو ایڈمنسٹریٹر نے سٹیو کو بتادیا کہ وہ لڑکی نہیں ہے اور ان کی ساری گفتگو سے انٹرنیٹ صارفین محظوظ ہورہے ہیں۔ اس نے یہ بھی بتایا کہ اس کا فون نمبر خفیہ رکھا گیا ہے جس پر سٹیو نے بھی معاملے کو مزاح قرار دے کر اظہار ناراضگی سے گریز کیا۔ اس دلچسپ واقعے پر ٹوئٹر صارفین کے تبصرے ابھی بھی جاری ہیں۔

مزید : جرم و انصاف


loading...